نئی دہلی: کورونا وائرس کے نام کے اس موذی جرثومہ نے، جو چین ،ایران، اٹلی اور جنوبی کوریا میںوبائی شکل اختیار کر کے شمال سے جنوب تک اور مشرق سے مغرب تک مختلف ممالک پرتیزی سے حملہ آور ہو رہا ہے اب ہندوستان کو بھی اپنا ہدف بنا کر داخل ہوگیا ہے۔

گذشتہ 24گھنٹے کے دوران یکے بعد دیگرے کورونا وائرس کے دوکیس سامنے آئے جن کی جانچ کے بعد وہ پوزیٹیو پائے گئے۔ایک کیس جنوبی ہند کی نوتشکیل ریاست تلنگانہ میں ملا تو دوسرا کیس دہلی میں پوزیٹیو پایا گیا۔ دونوں مریضوں کا علاج شروع کر دیا گیا ہے۔دہلی کے شخص کا علاج رام منوہر لوہیا اسپتال میں کیا جا رہا ہے۔محکمہ صحت کے مطابق ان دونوں مریضوں کو افاقہ ہے۔

اس سے قبل ہندوستان میں بیک وقت جوتین کیس سامنے آئے تھے وہ جنوبی ہند کی ہی ریاست کیرل کے تھے۔ جس سے ہندوستان میں کورونا وائرس کے مریضوں کی تعداد بڑھ کر پانچ ہو گئی۔ بتایا جاتا ہے کہ دہلی میں جس شخص میں کورونا وائرس کا ٹسٹ پوزیٹیو پایا گیا ہے وہ حال ہی میں اٹلی سے واپس آیا تھا۔جبکہ تلنگانہ میں جو شخص اس مرض کا شکار پایا گیا وہ دوبئی جا کر آیا تھا۔

مرکزی وزیر صحت ڈاکٹر ہرش وردھن نے ہندوستان میں کورونا وائرس کی تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ ان کی وزارت اور ریاستی حکومتیں کورونا وائرس صورت حال پر گہری نگاہ رکھے ہیں اور جو25ہزار افراد کورونوائرسے متاثرہ ممالک کا سفر کر کے وطن واپس آئے ہیں ان پر گہری نگاہ رکھی جا رہی ہے۔ واضح ہو کہ دنیا بھر میںکورونا وائرس کی زد میں آکر ہزاروں افراد اب تک ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ پون لاکھ سے زائد افرادکورونا وائرس سے تاثر ہیں۔

چین کے بعدایران اور اٹلی میں کورونا وائرس کا حملہ بڑھ گیا ہے جہاں کورونا سے مرنے والوں کی تعداد میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔مجموعی طور پر اب تک دنیا بھر میں 2870افراد اس کورونا وائرس کے حملہ سے داعی اجل کو لبیک کہہ چکے ہیں جبکہ 79824افراد اس کورونا وائرس سے متاثر ہیں۔