Turkish citizens think corruption allegations against Govt true : Survey

انقرہ:(اے یو ایس)ترک صدر رجب طیب اردغان کے چیف ایڈوائزر اوکتے سارال کے بدنام زمانہ مافیا سرغنہ سیدات پیکر پر اس الزام کے باوجود کہ انہیں ‘ترکی کے دشمن استعمال کررہے ہیں’، ایک سروے میں پتہ چلا ہے کہ زیادہ تر ترک شہری سیدات پیکر کے حکومت پر لگائے گئے الزامات کو سچ مانتے ہیں۔ حال ہی میں لگائے گئے الزامات کے بارے میں اوکتے سارال کا کہنا ہے کہ ‘ہماری حکومت وہ کرے گی جو ضروری ہے۔’ کئی ہفتوں تک ترک حکومت کے دوست سے دشمن میں میں بدل جانے والے سیدات پیکر حکمران جماعت جسٹس اینڈ ڈویلپمنٹ پارٹی میں ہونے والی بدعنوانی کو بے نقاب کرنے کے لیے ویڈیوز منظرعام پر لاتے رہے ہیں۔ان میں سے زیادہ تر اسلحہ اور منشیات کی اسمگلنگ اور ترکی کے سینیئر افسران کی شام میں النصرہ کے انتہا پسندوں کے ساتھ روابط کے بارے میں تھیں۔

لگاتار سامنے آنے والی ان آٹھ ویڈیوز میں سیدات پیکر نے ‘ملک کے انتہائی خفیہ گہرے رازوں’ پر سوالات کھڑے کر دیے ہیں اور دعویٰ کیا ہے کہ وہ ان حکومتی افسران سے بدلہ لیں گے جنہوں نے ان کے گھر پر چھاپا مارا تھا اور ان کے خلاف مجرمانہ مقدمے کا آغاز کیا۔ ترکی کی ایک پولنگ فرم اوراسیا نے حالیہ سروے میں بتایا ہے کہ سروے میں شامل 75 فیصد افراد کا ماننا ہے کہ سیدات پیکر نے حکومت سے متعلق جو دعوے کیے ہیں وہ سچ ہیں۔سروے 2480 افراد پر مشتمل ہے اور اسے مئی کے آخر میں کیا گیا تھا۔اس سروے سے معلوم ہوتا ہے کہ حریف جماعتوں کے 95 فیصد جواب دہندگان کا ماننا ہے کہ جن سیاستدانوں پر الزامات لگائے گئے ہیں انہیں استعفیٰ دے دینا چاہیے۔جبکہ حکمران جماعت اور اس کے قومی حلیف کی حمایت کرنے والے ایک تہائی افراد کا بھی یہی ماننا ہے۔

پیر کو ترکی کے اخبار کمحریت میں بتایا گیا تھا کہ ترکی کے کسٹمز ڈیٹا کے مطابق ملک کے سابق وزیراعظم اور حکمران جماعت کے موجودہ نائب رہنما بنالی یلدرم کا وہ دعویٰ غلط ہے جس میں انہوں نے کہا تھا کہ ان کے بیٹے ارکام نے دسمبر میں ونیزیولا کوکوویڈ-19 کی امداد پہنچائی تھی۔ ان کے ونیزیولا کے متعدد دوروں پر اس وقت سوالات اٹھائے گئے جب سیدات پیکر نے دعویٰ کیا کہ یہ دورے ونیزیولا سے ترکی تک نیا منشیات اسمگلنگ راستہ بنانے کے لیے گئے تھے۔گذشتہ سال یکم اکتوبر اور 31 دسمبر کے کسٹمز ڈیٹا کے مطابق کمحریت اخبار نے ثابت کیا ہے کہ ترکی سے ونیزیولا تک کوئی ماسک یا ٹیسٹ کٹ نہیں پہنچائی گئی ہے۔اس دوران صرف ونیریولا کے شہر کاراکاس تک 1500 ٹیسٹ کٹس پہنچائی گئی تھیں جو ان دو کمپنیوں کے درمیان کاروباری کانٹریکٹ کا آغاز تھا جن کا تعلق یلدرم سے نہیں ہے۔ اخبار میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ یا تو یلدرم نے ونیزیولا تک ماسک اور ٹیسٹ کٹ نہیں پہنچائیں یا یہ غیر قانونی ذریعے سے کیا گیا۔