Kamala Harris tells Guatemala migrants: 'Do not come to US'

واشنگٹن:(اے یوایس)امریکی نائب صدر کملا ہیرس نے کہا ہے کہ ملک میں غیر قانونی طریقوں سے آنے والے گوئٹے مالا کے تارکین وطن کو ملک بدر کیا جائے گا۔ انہوں نے یہ بات اپنے پہلے غیر ملکی دورے کے دوران گوئٹے مالا کے صدر آلاخاندرو جیا ماتی کے ساتھ ملاقات کے دوران کہی۔

ہیرس اور جیا ماتی نے بین الوفود مذاکرات کے بعد ایک مشترکہ پریس کانفرنس کا اہتمام کیا۔کملا ہیرس نے گوئٹے مالا لے لوگوں سے کہا کہ غیر قانونی طریقہ سے امریکہ میں داخل نہ ہوں۔انہوں نے لوگوں کو انتباہ دیا کہ جو بھی غیر قانونی طریقہ سے امریکہ میں داخل ہونے کی کوشش کرے گا اسے سرحد سے ہی واپس بھگا دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ انہیں صدر جو بائیڈن نے جنوبی سرحد سے تارکین وطن کی یلغار پر قابو پانے کا ذمہ داری سونپی گئی ہے۔ کملا ہیرس نے مزید کہا کہ میرا یہ دورہ گوئٹے مالا کے ساتھ غیر قانونی ہجرت، تشدد اور بد عنوانی سے نمٹنے کے اقدامات تلاش اور ان پر غور کرنے کے لیے کیا گیا ہے۔

اس دوران گوئٹے مالا کے صدر جیاماتی نے بتایا کہ حالیہ ایام میں غیر قانونی تارکین وطن کا مسئلہ ہمیں در پیش ہے،ہمیں امریکہ کے ساتھ مشترکہ طور پر تعاون کرنا ہوگا جبکہ ہمیں اپنے عوام کو زندگی کے بہتر مواقع فراہم کرتے ہوئے انہیں نقل مکانی سے روکنے کی کوشش کرنا ہوگی۔