Over 20 Afghan Commandos Killed in Faryab Clashes: Source

کابل: شمال مغربی صوبہ فریاب میں طالبان کے ساتھ خونیں جھڑپ میں افغان فوجی کے خصوصی یونٹ کے کم از کم 20 چھاپہ مار ہلاک ہو گئے۔ ایک سیکورٹی افسر نے اپنا نام ظاہر نہ کرنے کی استدعا کرتے ہوئے کہا کہ یہ تصادم اس وقت ہوا جب صوبہ کے دولت آباد ڈسٹرکٹ میں کمانڈوز نے مقامی فوجیوں کے ہمراہ ڈسٹرکٹ کو دہشت گردوں سے پاک کرنے کی کارروائی شروع کی۔

ذرائع نے بتایا کہ ان جھڑپوں میں تقریباً23کمانڈوز ہلاک اور 6پولس اہلکار زخمی ہو گئے۔ذرائع کے مطابق جھڑپوں کے بعد سلامتی دستے ڈسٹرکٹ کے مرکز سے واپس آگئے اور فریاب میں قرم قول میں تعینات ہو گئے۔ ایک ہفتہ قبل زبردست جھڑپوں کے بعد دولت آباد ڈسٹرکٹ کے مرکز پر طالبان کا قبضہ ہو گیا تھا۔

رکے ہوئے امن عمل کے درمیان ملک میں تشدد اپنے عروج پر ہے ۔سرکاری ذرائع کے مطابق دن بھر میںکم از کم80اضلاع میںافغان سلامتی دستوں اور طالبان میں تصادموں کی خبریں ہیں۔ذرائع کے مطابق اس مدت کے دوران 100سے زائد طالبان انتہاپسند اورسلامتی دستوں کے90فوجی مارے گئے تھے لیکن طالبان نے اور نہ ہی حکومت نے ہلاک شدگان کی کوئی تعداد بتائی۔