Army spots 2 drones over Kaluchak military station

سری نگر: اتوار کے روزعلی الصباح جموں ایئر فورس اسٹیشن کے تکنیکی علاقے میں دو دھماکے ہوئے۔ ایک رپورٹ کے مطابق ہندوستانی فضائیہ کے اسٹیشن پر ڈرونز سے گرائے گئے بموں کے دھماکوں سے ایر فورس کے دو اہلکار زخمی ہوئے ہیں۔ یہ جموں ایئر پورٹ کمپلیکس کے بہت قریب ہے۔ہندوستانی فضائیہ نے ٹویٹ کر کے واقعے کی تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ کم شدت کے دونوں دھماکے اسٹیشن کے اعلیٰ سیکیورٹی تکنیکی علاقے میں ہوئے ہیں۔ پہلے دھماکے سے ہوائی اڈے کے تکنیکی علاقے میں ایک عمارت کی چھت کو نقصان پہنچا۔ جبکہ دوسرا دھماکا کھلے علاقے میں کیا گیا ہے۔

انہوں نے بتایا کہ دھماکوں سے ایک عمارت کو نقصان پہنچا اور ایئر فورس کے دو اہلکار زخمی ہو گئے۔ زخمی اہلکاروں کی شناخت اروند سنگھ اور ایس کے سنگھ کے طور پر ہوئی ہے۔ دھماکوں کے ایک روز بعد کالو چک ملٹری اسٹیشن کے اوپر دو ڈرونز منڈلاتے دیکھے گئے۔بتایا جا رہا ہے کہ دھماکوں کی آواز دور دور تک سنی گئی۔ایک عہدیدار نے بتایا کہ ایئر فورس سگنل کمپلیکس کے قریب واقع ‘ہیلی ڈسبرسل بلڈنگ’ کو دو جگہ پر نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی ہے۔انہوں نے بتایا کہ دھماکے کی وجہ سے عمارت کی چھت اور کھڑکیوں کو کو نقصان پہنچا ہے۔

وزیر دفاع راجناتھ سنگھ نے دھماکہ کے فوراً بعد فضائیہ کے نائب سربراہ ایئر مارشل ایچ ایس اروڑہ سے، جنہوںنے بذات خود جائے وقوعہ پہنچ کر صورتحال کا جائزہ لیا، بات کی ۔ عہدے داروں نے بتایا کہ ڈرون کی پرواز کے راستے کا پتہ لگانے کے لئے تفتیش جاری ہے۔ جموں ایئر پورٹ کے ڈائریکٹر پروت رنجن بیوریہ نے بتایا کہ دھماکوں کی وجہ سے طیاروں کی پرواز میں کوئی خلل نہیں پڑا۔ انہوں نے کہا ، “جموں کے ہوائی اڈے جانے اور جانے والی پروازیں شیڈول کے مطابق چلیں۔ دریں اثنا جموں وکشمیر پولیس نے غیر قانونی سرگرمیاں (روک تھام) ایکٹ کے تحت ایف آئی آر درج کر لی۔