PM Modi reviews Ayodhya development plan

لکھنؤ: وزیر اعظم نریندر مودی نے گذشتہ روز ورچوئل اجلاس میں اترپردیش کے وزیر اعلیٰ یوگی آدتیہ ناتھ ، دونوں نائب وزیر اعلی اور ریاست کے اعلی عہدیداروں کے ساتھ ایودھیا کی ترقی سے متعلق منصوبے کا جائزہ لیا۔ یوپی کے سرکاری عہدیداروں نے جائزہ اجلاس میں ایک پریزنٹیشن پیش کی جس میں ایودھیا کی ترقی کے مختلف پہلوؤں کا احاطہ کیا گیا تھا۔

حکام نے بتایا کہ ایودھیا کی ترقی کو ایک روحانی مرکز ، عالمی سیاحت کا مرکز اور ایک پائیدارا سمارٹ سٹی کی حیثیت سے تصور کیا جارہا ہے۔وزیر اعظم نے کہا کہ جس طرح بھگوان رام لوگوں کو اکٹھا کرنے کی صلاحیت رکھتے ہیں اسی طرح ایودھیا کے ترقیاتی کاموں کو بھی صحت مند عوام کی شرکت کے جذبے سے ، خاص کر نوجوانوں کی رہنمائی کے ذریعہ۔

انہوں نے شہر کی اس ترقی میں ہمارے باصلاحیت نوجوانوں کی صلاحیتوں سے استفادہ کرنے کی تلقین کی۔اجودھیا ترقیاتی منصوبہ پر وزیر اعظم کے جائزہ اجلاس پر تبصرہ کرتے ہوئے عارضی رام مندر کے اچاریہ ستندر داس نے کہا کہ یہ اچھی بات ہے۔ جب تک وزیر اعظم اور وزیر اعلیٰ اس سے وابستہ نہیں ہوں گے ترقیاتی کاموں کا لوگوں کو علم نہیں ہو سکے گا۔