To stop Taliban from taking over more territory Fight against them fiercely : Dostam urges his soldiers

کابل: افغانستان کی حالگت مزید دگرگوں دیکھتے ہوئے ملک کے سابق نائب صدر مارشل عبد الرشید دوستم نے اپنے جانبازوں اور حامیوں کو تلقین کی ہے کہ وہ طالبان کو ملک کے مزید علاقوں پر قابض ہونے سے روکنے کے لئے ان کے خلاف شدید جنگ کریں۔

افغان مجلس اعلیٰ برائے قومی مفاہمت کے نائب سربراہ عنایت اللہ بابر فرہامند نے ٹوئیٹر کے توسط سے کہا کہ دوستم نے اپنے ساتھیوں اور لڑاکوں کو ٹیلی فون کر کے کہا ہے کہ وہ طالبان کے خلاف پوری شدت کے ساتھ اٹھ کھڑے ہوں اور ان کو پسپا کرنے اور دھول چٹانے کے لیے ہر ممکن اقدام کریں۔ترکی میں علاج کراکے شفایاب ہوجانے والے مارشل دوستم نے اپنے تمام جانبازوں کو ہدایت کی کہ وہ طالبان سے ملک کی حفاظت کریںاور ان کو پسپا کرنے کے لیے ایڑی چوٹی کا زور لگا دیں۔

عنایت اللہ نے یہ بھی کہا کہ جلد ہی دوستم بھی میدان جنگ میں واپس آجائیں گے۔دوستم دو ہفتہ قبل بغرض علاج ترکی جانے سے پہلے جوزوان صوبہ میں طالبان کے خلاف جنگ میں پیش پیش تھے۔افغانستان ٹائمز نے خبر دی کہ دوستم اور ان کے بڑے بیٹے یار محمد کو طالبان کے خلاف لڑائی میں میدان جنگ میں زہر دیا گیا ہوگا۔جس کے باعث وہ بیمار پڑگئے اور انہیں فوری علاج کے لیے ترکی بھیجنا پڑا۔اور یہ بات ایسے موقع پر ہوئی جب ملک میں تشدد عروج پر تھا اور طالبان اور افغان سلامتی دستوں کے درمیان تیزی کے ساتھ جھڑپیں ہو رہی تھیں۔