Ready to talk to Taliban: says Ashrf Ghani

کابل: صدر افغنستان اشرف غنی نے افغان سفیر متعین پاکستان نجیب اللہ علی خیل کی بیٹی سلسلہ علی خیل کو اغوا اور ان پر تشدد کیے جانے کے معاملہ پر شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے افغان سفیر اور دیگر سفارتی عملہ کو پاکستان سے واپس بلا لیا۔

صدر غنی کے مشیر وحید عمر نے کہا کہ سفیر کی صاحبزادی کے اغوا کنندگان کو کیفر کرار تک پہنچایا جائے اور پاکستان میں افغان سفارتی عملہ کا تحفظ یقینی بنیا جائے۔انہون نے یہ بھی کہا کہ فی الحال افغان سفیر کا قیام کابل میں ہی رہے گا۔

واضح ہو کہ پاکستان مےں ا فغانستان کے سفےر نجےب اللہ علی خےل کی26سالہ بےٹی کو کچھ نامعلوم اشخاص نے اغواکر کے پانچ گھنٹے تک تشدد کا نشانہ بنانے کے بعد چھوڑ دےاتھا جب ان کی بازیابی ہوئی تو،ان کے ہاتھ پاﺅںبندھے ہوئے تھے۔ اور حالت نازک تھی ۔ جس کے بعد انہےں اسپتال مےں داخل کیا گےا ۔ افغانستان کی حکومت نے سفارت کاروںاور ان کے اہل خاندان کے سےکورٹی کے بارے مےں اپنا خدشہ ظاہر کےا ۔ ابھی تک ررپورٹ کے مطابق 4سے پانچ افراد نے نجےب اللہ علی خےل کی بےٹی کوزبردستی اٹھا ےا اور فرار ہوگئے۔