Pegasus row: PM Modi must make statement in Parliament: Chidambaram

نئی دہلی: پیگاسس جاسوسی کے الزامات پر کانگریس کے سینئر رہنما پی چدمبرم نے کہا کہ حکومت جے پی سی تشکیل دے یا سپریم کورٹ سے تحقیقات کے لئے ایک سیٹنگ جج مقرر کرنے کی درخواست کرے

کانگریس کے رہنما پی چدمبرم نے نیوز ایجنسی پی ٹی آئی کو بتایا کہ وزیر اعظم نریندر مودی کو پیگاسس معاملے پر پارلیمنٹ میں بیان دینا چاہئے وہ واضح کریں کہ کیا جاسوسی کی گئی تھی کانگریس کے رہنما اور سابق مرکزی وزیر پی چدمبرم نے کہا کہ پارلیمنٹری کمیٹی برائے انفارمیشن ٹکنالوجی کی تحقیقات سے زیادہ مشترکہ پارلیمانی کمیٹی (جے پی سی) کی تحقیقات زیادہ کارگر ثابت ہوسکتی ہے۔

انہوں نے کہا کہ اگر فرانس اسرائیل پیگاسس جاسوسی کیس کی تحقیقات کا حکم دے سکتا ہے تو ہندوستان کیوں نہیں؟دریں اثنا شیوسینا کے رکن پارلیمنٹ سنجے راوت نے استفسار کیاکہ پیگاسس کے ذریعہ سیاستدانوں اور صحافیوں کی مبینہ جاسوسی کو کس نے مالی اعانت فراہم کی

۔ انہوں نے اس کا موازنہ ہیروشیما ایٹم بم دھماکوں سے کرتے ہوئے کیا کہتے ہیں کہ جاپانی شہر اس حملے سے ہلاک ہوا تھا جب کہ اسرائیلی سافٹ ویئر کی جاسوسی آزادی کی موت کا سبب بنی تھی راوت نے اپنے ہفتہ وار کالم روکھٹوک میں شیو سینا کے ترجمان سمن کے نام سے لکھا ہے جدید ٹیکنالوجی نے ہمیں غلامی کی طرح واپس لے لیا ہے راوت نے دعوی کیا کہ ہیروشیما میں لوگوں کی موت ہوئی۔