Riyadh wants to strengthen its bilateral ties with Islamabad

ریاض: ( اے یوایس ) سعودی عرب کے وزیرخارجہ شہزادہ فیصل بن فرحان آل سعود آج پاکستان کے ایک روزہ سرکاری دورے پر اسلام آباد پہنچ گئے۔ جہاں نور خان فضائی اڈے پر وزیر اعظم عمران خان کے نمائندہ خصوصی حافظ طاہر اشرفی نے ان کا خیر مقدم کیا ۔شہزادہ فیصل کا ایک سال میں پاکستان کا یہ دوسرا سرکاری دورہ ہو گا۔اس موقع پر وزارت خارجہ کے اعلیٰ عہدیداران ۔سعودی سفیر متعین پاکستان نواف سعید المالکی بھی ایر بیس پر موجود تھے۔

بعدازاں ان کے اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کے درمیان دفتر خارجہ میں دوطرفہ تعلقات کے تمام پہلوؤں، علاقائی اور بین الاقوامی امور پر تبادلہ خیال ہوا۔ملاقات کے بعد دونوں وزرائے خارجہ نے مشترکہ نیوز کانفرنس کی جس میں سعودی وزیر خارجہ نے کہا کہ انہیں ا±مید ہے کہ سعودی عرب رابطہ کونسل، پاکستان اور سعودی عرب کے تعلقات کو نئی سطح پر لے جانے، انہیں ادارہ جاتی بنانے اور تمام مواقع کی تلاش میں سنگِ میل ثابت ہوگی۔فرحان السعود نے کہا ہے کہ ان کا ملک کونسل کے توسط سے پاکستان کے ساتھ اپنے تعلقات کی جہت کو وسیع کرنا چاہتا ہے۔شہزادہ فرحان کا یہ دوسرا پاکستانی دورہ ہے۔ قبل ازیں انھوں نے دسمبر 2020 میں پاکستانی قیادت کے ساتھ بات چیت کے لیے اسلام آباد کا دورہ کیا تھا۔

عرب نیوز کی ایک رپورٹ کے مطابق یہ دورہ دونوں ممالک کے درمیان اعلیٰ سطح پر روابط کا تسلسل ہے۔اس کا آغاز سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان کے دورہ پاکستان سے ہوا تھااوراس کے بعد پاکستانی وزیراعظم عمران خان نے سعودی عرب کا دورہ کیا تھا۔ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان (ایم بی ایس)کے فروری 2019 میں اسلام آباد کے دورے کے موقع پر سعودی عرب نے پاکستان کے ساتھ مختلف شعبوں میں 20 ارب ڈالر مالیت کی سرمایہ کاری کے معاہدے طے کیے تھے۔وزیراعظم عمران خان نے مئی میں پاکستان کے وزرا اور اعلیٰ حکام پر مشتمل وفد کے ساتھ سعودی عرب کا دورہ کیا تھا۔اس دورے میں دونوں ملکوں کے درمیان سیاسی، اقتصادی، تجارتی اور دفاعی شعبے میں تعاون کے فروغ سے متعلق متعدد سمجھوتوں پر دستخط کیے گئے تھے ۔