Indian Army installs cameras, sensors to track Chinese movement in eastern Ladakh

نئی دہلی: وادی گلوان پر ہوئے تنازعہ کے بعد سے ہند- چین سرحد پر تنا و¿برقرار ہے۔ ہندوستانی فوج نے اب چینی فوج کی سرگرمیوں کی نگرانی کے لئے حقیقی کنٹرول لائن (ایل اے سی)پر نئے کیمرے اور سینسر لگائے ہیں۔ ہندوستانی سکیورٹی فورسز آہستہ آہستہ ایل اے سی پر کیمرے اور سینسر کا نیٹ ورک تیار کررہے ہیں تاکہ چینی فوج کی ہر ایک نقل حرکت پر نظر رکھی جاسکے اب فوج نے بہت سے پرانے کیمرے ہٹا دیئے ہیں اور اعلی معیار کے کیمرے لگائے ہیں۔آہستہ آہستہ صحیح حکومت اب ہر محاذ پر تعینات فوجیوں کو ہر صورتحال سے نمٹنے کے لئے تیار کررہی ہے۔ نئے اور جدید ہتھیاروں کے علاوہ آپریشنل ایریا کو بھی نئے آلات سے آراستہ کیا جارہا ہے۔ سرکاری ذرائع کے مطابق ، ہندوستانی سکیورٹی فورسز نے مشرقی لداخ سے لے کر اروناچل پردیش تک چین کی نگرانی کے لئے پہلے سے زیادہ تعداد میں کیمرے اور سینسر لگائے گئے ہیں۔اعلیٰ معیار والے کیمرے آسانی سے دور دراز کے علاقوں پر آسانی سے اپنی پکڑ بنالیتے ہیں اور مخالفین اور دشمنوں کی سرگرمیوں کو سمجھنے میں آسانی ہوتی ہے۔ ان کیمروں کی مدد سے ، فوجی اب آسانی سے دشمن کی ہر حرکت کا پتہ لگاسکیں گے اور سکیورٹی فورسز پہلے سے ہی کسی جگہ پر پہنچ سکیں گی۔