Tight security at Red Fort ahead of 15 August

نئی دہلی: (اے یو ایس ) یوم آزادی کے موقع پر دہلی میں سخت حفاظتی انتظامات ہوں گے۔ دہلی پولیس کمشنر نے کل دو گھنٹے تک لال قلعہ کا معائنہ کیا۔ دہلی پولیس کمشنر نے ڈرون ، اینٹی ڈرون سسٹم ریڈار کے حوالے سے لال قلعہ میں ایئر فورس انڈین آرمی کے اعلیٰ سطحی افسران کے ساتھ گہرائی سے گفتگو کی۔ دہلی پولیس کے اعلیٰ حکام کو بریفنگ بھی دی گئی۔

کہا جاتا ہے کہ اس بار ڈرون حملے کا سب سے زیادہ خطرہ لال قلعہ پروگرام اور دارالحکومت دہلی کے دیگر علاقوں پر منڈلا رہا ہے۔ چند ماہ قبل جموں ایئربیس پر ڈرون حملے کے بعد ملک کے دیگر حصوں میں بھی سخت سیکورٹی بندوبست کے علاوہ لال قلعے کے لیے بے مثال سیکورٹی کا بندوبست کیا گیا ہے ۔ وہاں کئی جگہوں پر بیریکیڈنگ کی گئی ہے۔

لال قلعے کی سیکورٹی کے حوالے سے دہلی پولیس نے پہلے کہا تھا کہ کچھ تخریب کار عناصر خلل پیدا کرسکتے ہیں۔ ایسی صورتحال میں سیکورٹی میں کوئی کوتاہی نہیں ہے۔ انٹری ڈرون سسٹم کو بھی کمزور جگہوں پر فعال کر دیا گیا ہے۔یوم آزادی پر سیکورٹی کے پیش نظر نوئیڈا سے دہلی جانے والی بھاری گاڑیوں کا راستہ تبدیل کر دیا گیا ہے۔

نوئیڈا سے دہلی جانے والی بھاری گاڑیوں کو ایکسپریس کے ذریعے ایسٹرن پیری فیرل کے اندر اور باہر جانا پڑے گا۔ چلہ بارڈر ، کلندی کنج اور ڈی این ڈی تین بارڈرز سے بھاری گاڑیاں نوئیڈا ایکسپریس وے سے مشرقی پیرفیرل وے سے نکلیں گی۔ یہ پابندی 15 اگست کی دوپہر 1 بجے تک عائد کی گئی ہے۔