Taiwan coast guard seizes Chinese oil ship

تائپے: تائیوان کوسٹ گارڈ ایڈمنسٹریشن (سی جے اے)نے تائیوان کے قبضے والے پینگو جزیرے کے قریب مل کی سمندری سرحد کو پار کرنے پر ایک چینی تیل ٹرانسپورٹ اور سپلائی جہاز کو ضبط کر لیا ہے۔ تائیوان نیوز کے مطابق واقعہ جمعرات کو پیش آیا ، جب سی اے جی کے پینگو جزائر کے فلوٹیلا کی جانب سے متعدد ریڈیو وارننگ کے باوجود نہیں رکا۔ کوسٹ گارڈ کے اہلکار غیر قانونی مصنوعات کا معائنہ کر نے کے لئے جلد سیے کشتی پر چڑھ گئے۔

کپتان سر نیم کائی اور چھ دیگر عملے کے ارکان کو حراست میں لے لیا گیا اور سب کاکویڈ19-ٹیسٹ منفی آیا۔ سی جے اے چینی ٹیم کو واپس پینگو لے گیا جہاں قانون کے مطابق ان سے نمٹا جائے گا۔ واضح ہو کہ پچھلے سال ستمبر کے وسط سے ، چین مستقل طور پر تائیوان کے ڈیفنس زون میں طیارے بھیج کر اپنی گرے زون حکمت عملی کو فروغ دے رہا ہے۔ در اصل ، بیجنگ تائیوان پر مکمل خودمختاری کا دعوی کرتا ہے ، جبکہ اصل زمین چین کے جنوب مشرقی ساحل پر تقریباً 24 ملین لوگوں کی جمہوریت ملک تائیوان سات دہائیوں سے زائد عرصے سے ایک علیحدہ ریاست ہے۔

دوسری طرف تائپے امریکہ سمیت جمہوریتوں کے ساتھ اسٹریٹجک تعلقات بڑھا کر چینی جارحیت کا مقابلہ کر
رہا ہے ، جس کی بیجنگ کی طرف سے بار بار مخالفت کی جا رہی ہے۔ چین نے دھمکی دی ہے کہ تائیوان کی آزادتی کا مطلب جنگ ہے۔ یکم جون کو ، چینی صدر شی جن پنگ نے خود مختار تائیوان کے ساتھ مکمل انضمام کا وعدہ کیا اور اس جزیرے کی باضابطہ آزادی کی کسی بھی کوشش کو ناکام بنانے کا عزم کیا۔