At least 21 killed, dozens missing in Tennessee flood

ویورلی: امریکہ کے ٹینیسی میں آنے والے سیلاب سے کم از کم21 افراد ہلاک اور50 سے زائدلاپتہ ہیں۔ مقامی میڈیا نے ہفتہ کو یہ رپورٹ دی۔ہمفریز کانٹی شیرف کرس ڈیوس نے دی ٹینیسیئن کو بتایا کہ سیلاب میں کم از کم 21افراد ہلاک ہو چکے ہیں اور لاپتہ افراد کی تلاش ہفتے کے آخر تک جاری رہی۔چونکہ لاپتہ افراد کا ہنوز سراغ نہیں لگ سکا ہے اس لیے ہلاک شدگان کی تعداد مٰنا ضافہ کا خدشہ ہے۔

ڈیوڈ نے میڈیا کے نمائندوں کو بتایا کہ ہلاک شدگان میں سے دو شیر خوار بچوں کی لاشیں ملی ہیں جو اپنے والد کی گود سے نکل کر بہہ گئے تھے۔ انیہوں نے یہ بھی کہا کہ ہلاک شدگان میں ان کا ایک دوست بھی شامل ہے۔محکمہ نے کہا کہ یہ 28 برسوں میں سیلاب کی بدترین صورتحال ہے۔دی ٹینسیئن کی رپورٹ کے مطابق ہمفریز کاؤنٹی میں دیہی سڑکیں اورشاہراہیں سیلاب کے پانی سے بند ہیں۔

محکمہ موسمیات کے مطابق ہفتہ کو 15 انچ تک بارش ہوئی جو کہ خطے کی کل سالانہ بارش کا تقریبا 20-25 فیصد ہے۔اخبار نے بتایا کہ بڑے پیمانے پر بجلی کی کٹوتی اور مواصلات کو نقصان پہنچنے کی اطلاعات ہیں جس کے بعد علاقہ مقامی ایمرجنسی کا اعلان کیا گیا ہے۔ٹیننسی کے رہائشیوں کا کہنا ہے کہ انہوں نے اپنی زندگی میں ایسا بھیانک سیلاب نہیں دیکھا۔