Ukrainian plane hijacked in Kabul

کیف: یوکرین کی وزارت خارجہ نے تصدیق کی ہے کہ افغانستان سے یوکرین کے شہریوں کو نکالنے کی خدمت پر مامور اس کے طیارے کو نامعلوم بندوق برداروں نے اسلحہ کے زور پر اغوا کر لیا اور اسے ایران لے گئے۔

وزارت نے کہا کہ اس طیارے کو اتوار کے روز نامعلوم مسلح افراد نے اغوا کیا تھا۔لیکن ایران کے شہری ہوا بازی کے محکمہ نے اس کی تردید کی ہے کہ کوئی طیارہ اغوا کر کے ایران لایا گیا ہے اور کہا کہ یہ طیارہ محض ایندھن بھرنے کے لیے مشہد شہر میں اترا تھا۔

محکمہ نے مزید کہا کہ طیارہ کو ایندھن بھرنے کے بعد یوکرین کے دارالخلافہ کیف پرواز کرنے کے لیے ہری جھنڈی دکھا دی گئی۔فی الحال کم و بیش100یوکرینی شہری افغانستان سے نکلنے کے لیے کسی فلائٹ کا انتظار کر رہے ہیں۔

یوکرین نے یہ بھی کہا کہ کابل سے اپبے شہریوں کے انخلا کے لیے روانہ کردہ دیگر پروازیں بھی ناکم و نامراد رہیں کیونکہ یوکرینی شہری کابل میں حامد کرزئی انٹرنیشنل ایر پورٹ میں داخل ہی نہیں ہو سکے۔گذشتہ سال ایران نے ایک یوکرینی طیارہ مار گرایا تھا جس میں غیر ملکیوں سمیت 100سے زائد افراد ہلاک ہو گئے تھے۔ایران نے اسے انسانی غلطی بتا کر تحقیقات کی اجازت دے دی تھی۔