US says ISIS-K ‘planner’ of Kabul airport attack killed in drone strike in Afghanistan

واشنگٹن: امریکی فوجی ذرائع کے مطابق فوج نے ہفتہ کے روز مشرقی افغانستان میں دولت اسلامیہ فی العراق و الشام خراسان(داعش خراسان) کو ہدف بنا کر ڈرون حملہ کیا جس میں کابل کے حامد کرزئی انٹرنیشنل ایر پورٹ پراس ہفتہ کیے جانے والے دہشت گردانہ حملہ کا منصوبہ ساز ہلاک ہو گیا۔

امریکی سینٹرل کمانڈ کے ترجمان کیپٹن بِل اَربن نے اس فوجی کارروائی کی تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ یہ ڈرون حملہ افغانستان کے صوبے ننگرہار میں کیا گیا جس کے بعد جو ابتدائی اشارے موصول ہوئے اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ کہ ہم نے ہدف کو ہلاک کردیا۔ واضح رہے کہ جمعرات کو کابل ایئرپورٹ پر ہونے والے حملوں میں امریکی فوج کے 13 اہلکاروں اور 22 طالبان جنگجوو¿ں سمیت 103 سے زائد افراد ہلاک ہوگئے تھے۔

داعش خراسان گروپ نے حملوں کی ذمہ داری قبول کرنے کا دعویٰ کیا تھا۔ جس کے بعد امریکی صدر جو بائیڈن کی جانب سے فوری ردعمل سامنے آیا تھا۔جنہوں نے جمعرات کی شام قوم سے خطاب میں قصورواروں سے بدلہ لینے کے عزم کا اظہار کیا تھا۔ان کا کہنا تھا کہ ہم معاف نہیں کریں گے، ہم نہیں بھولیں گے، ہم ان کا شکار کریں گے اور ان سے بدلہ لیں گے۔جو بائیڈن نے امریکی فوجی کمانڈرز کو داعش خراسان کے اثاثوں، قیادت اور ٹھکانوں پر حملوں کے لیے آپریشنل منصوبہ بنانے کا بھی حکم دیا تھا۔