Jihadists “will now flow back into Afghanistan: says CIA former acting director

واشنگٹن:(اے یو ایس ) امریکی مرکزی انٹیلی ایجنسی سی آئی اے کے سابق نگراں ڈائریکٹر مائیکل مورل نے باور کرایا ہے کہ کابل کے طالبان کے ہاتھوں میں آنے اور امریکا کے ملک سے نکل جانے کے بعد دہشت گرد افغانستان میں اکٹھا ہوں گے۔

مورل نے یہ بات امریکی چینلCBS کو دیے گئے انٹرویو میں کہی۔ مورل کے مطابق طالبان کہتے ہیں کہ ”ہم نے امریکا کو نہیں بلکہ ناٹو اتحاد کو شکست دی ہے اور ہم نے قطعی طور پر دنیا میں سب سے بڑی فوجی طاقت کو ہزیمت سے دوچار کیا ہے“ ۔مورل 2011 سے 2013 کے بیچ دو بار سی آئی اے کے قائم مقام ڈائریکٹر کے منصب پر فائز رہے۔

اپنے انٹرویو میں انہوں نے مزید کہا کہ وہ سمجھتے ہیں کہ دہشت گرد اب افغانستان لوٹیں گے اور اس ملک کو کرہ ارض پر کسی بھی دوسرے علاقے سے زیادہ خطرناک بنا دیں گے۔مورل کے مطابق افغانستان میں فوجی وجود کے بغیر سب سے زیادہ خطرہ امریکا کو ہے۔امریکی انٹیلی جنس ایجنسی سی آئی اے کے سابق اعلیٰ عہدے دار کا یہ بیان ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب طالبان تحریک افغانستان میں اپنی نئی حکومت تشکیل دے چکی ہے۔