Man killed, woman injured in lightning in central Kashmir

بڈگام:(اے یو ایس ) وسطی کشمیر کے ضلع بڈگام کے بیروہ پانڑس میں آسمانی بجلی گرنے سے ایک ہلاک اور تین دیگرافراد زخمی ہوگئے۔ پانڑس علاقے میں یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب ایک ہی گھر کے کئی افراد اپنی دھان کی فصل کاٹنے میں مصروف تھے کہ اچانک تیز بارش ہونے لگی اور بارش کے دوران ہی آسمانی بجلی گری جس کی زد میں خاندان کے چار افراد آگئے جن میں سے ایک ہلاک ہو گیا اس کی شناخت گلزار احمد خان عمر 30سال کے طور پر کی گئی ہے ۔ گلزار کو اگر چہ سب ڈسٹرکٹ اسپتال ماگام لایا گیا۔ تاہم یہاں ڈاکٹروں نے انہیں مردہ قرار دیا۔ زخمیوں میں سے ایک خاتون کو ماگام اسپتال سے سری نگر منتقل کیا گیا۔

دو دیگر بھی معمولی زخمی ہوگئے تھے۔ گلزار کی لاش جوں ہی اپنے آبائی گھر پانڑس پہنچائی گئی وہاں صف ماتم بچھ گئی۔گلزار احمد خان کو بعد پر نم آنکھوں سے سپرد خاک کیا گیا۔ اس آسمانی آفت پر ہر طرف افسوس کا اظہار کیا گیا۔ مہلوک کے ایک رشتہ دار نے نیوز 18اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ آج کل کشمیر میں شالی کاٹنے کا موسم ہے، اس کام میں سب لوگ مصروف عمل ہوتے ہیں۔

بیروہ کے پانڑس میں بھی گلزار احمد اور ان کے گھر والے دھان کی فصل کاٹنے میں مصروف تھے، تو اسی دوران بارش کے ساتھ ساتھ آسمانی بجلی گرجنے لگی اور اچانک یہ افراد خانہ اس کی زد میں آگئے گلزار احمد خان موقع پر ہی شدید زخمی ہوگئے جبکہ تین دیگر لوگوں کو بھی معمولی زخم آئے ۔سب ڈسٹرکٹ اسپتال ماگام میں تعینات ڈاکٹر ناہدہ نے نیوز 18 اردو کے ساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ جوں ہی ان لوگوں کو یہاں لایا گیا تو ان میں گلزار احمد خان نیم مردہ حالت میں تھے ۔ ڈاکٹر ناہدہ نے کہا کہ یہ قدرتی آفت ہے اس میں کبھی کبھار شدید چوٹیں آتی ہیں، جن سے بچنا محال ہوتاہے۔