Former Afghanistan officials announce govt in exile, Saleh to lead

کابل: طالبان کے مکمل قبضہ کے بعد جنگ زدہ ا فغانستان چھوڑ کر اسلامی جمہوریہ افغانستان کے سابق عہدیداروں نے سابق نائب صدر امراللہ صالح کی قیادت میں جلاوطن افغان حکومت تشکیل دینے کا اعلان کر دیا۔ سوئزر لینڈ میں افغان سفارت خانے سے جاری ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اسلامی جمہوریہ افغانستان ہی عوام کے ووٹ سے منتخب جائز حکومت ہے اور کوئی دوسری حکومت ایک جائز حکومت کی جگہ نہیں لے سکتی۔

بیان میں مزید وضاحت کی گئی کہ اشرف غنی کے افغانستان سے فرار اور افغان سیاست سے ان کی علیحدگی کے بعد ان کے اول نائب صدر امر اللہ صالح ملک کی قیادت کر رہے ہیں۔ بیان کے مطابق اگانستان پر بیرونی عناصر قابض ہو گئے ہیں ملک کے عمائدین سے مشاورت کے بعدافغان حکومت کی تاریخی ذمہ داری کی بنیاد پر انہوں نے جلاوطن حکومت کے قیام کا اعلان کیا ہے۔

بیان میں یہ بھی کہاگیا کہ حکومت کے تین طاقتور بازوؤں عاملہ، عدلیہ اور مقننہ کو جلد ہی فعال کر دیا جائے گا۔بیان میں احمد مسعود کی زیر قیادت طالبان مخالف پنجشیر مزاحمتی محاذ کا ساتھ دینے کا بھی اعلان کیا گیا ہے اور یہ بی کہا گیا ہے کہ افغانستان کے تمام سفارت خانے اور قونصل خانے حسب معمول کام کرتے رہیں گے۔بیان اگرچہ سابق حکومت کے رہنماو¿ں، سیاسی لیڈروں اور دیگر سیاستدانوں کی جانب سے جاریکیا گیا ہے لیکن اس میں کسی کا نام نہیںتحریر کیا گیا۔