China sent 56 warplanes into Taiwan defense zone on Monday

بیجنگ:(اے یو ایس ) تا ئیوا ن کی وزارت دفاع نے کہا ہے کہ پیر کے روز چین کے 56جنگی طیارے ا س کی فضائی حدود میں داخل ہو گئے۔وزارت سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ پہلے تو دن میں 52فوجی طیاروں نے تائیوان کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کی اور اس کے بعد شام میں مزید 4طیارے داخل ہو گئے۔بیان میں بتایا گیا ہے کہ ان 56طیاروں میں38جے 16-جنگی جہاز 12ایچ6-، دو ایس یو 30-، دو وائی8 آبدوز شکن جنگی طیارے اور دو کے جے 500-فوری وارننگ اور کنٹرول طیارے شامل تھے۔قبل ازیں ہفتہ کے روز چین نے طاقت کا مظاہرہ کرتے ہوئے تائیوان کی فضا میں تین درجن سے زائد فوجی طیارے بھیجے تھے ۔

خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس نے رپورٹ کیا کہ تائیوان کی وزارتِ دفاع کے مطابق چین کے 39 طیارے تائیوان کی فضائی دفاعی حدود (ایئر ڈیفنس آئیڈینٹی فکیشن زون) میں دو گروپس میں داخل ہوئے۔ ایک گروپ دن اور دوسرا رات کے اوقات میں داخل ہوا۔اس سے قبل جمعہ کو چین کے 38 طیاروں نے تائیوان کے جنوبی علاقے میں پرواز کی تھی۔واضح رہے کہ بیجنگ کا دعویٰ ہے کہ اس کے مشرقی ساحل پر واقع تائیوان چین کا علاقہ ہے۔ملیشیا کی ایئر فورس کی جاری کردہ تصویر جس میں دعوے کے مطابق چین کے جنگی طیارے ملائیشیا کی فضائی حدود کی خلاف ورزی کے مرتکب ہوئے ہیں (اے ایف پی)سال 1949 میں خانہ جنگی کے دوران یہ علاقے دو حصوں میں علیحدہ ہو گئے تھے۔

اس وقت کمیونسٹ پارٹی نے چین پر کنٹرول سنبھال لیا تھا جب کہ تائیوان میں قومیت پسندوں نے حکومت قائم کی تھی۔واضح رہے کہ جمعہ کو کمیونسٹ پارٹی نے اپنے اقتدار کی 72 ویں سالگرہ بھی منائی تھی۔تائیوان کےخبر رساں ادارے ‘سینٹرل نیوز ایجنسی’ نے ایک رپورٹ میں کہا کہ اگرچہ چین ایک سال سے زائد عرصے سے تائیوان میں اپنے فوجی طیاروں کی پرواز کر رہا ہے لیکن ہفتے کو بھیجے گئے طیاروں کی یہ تعداد ایک روز میں سب سے زیادہ تھی۔تائیوان کی وزارتِ دفاع کا کہنا ہے کہ ہفتے کو دن کے اوقات میں بیس جب کہ رات میں 19 چینی طیارے داخل ہوئے۔ان کے بقول، ان طیاروں میں زیادہ تر جے 17 اور ایس یو 30 لڑاکا طیارے تھے۔