Iraq claims capture of IS financial chief in operation abroad

بغداد:(اے یو ایس )عراق کے وزیراعظم مصطفیٰ الکاظمی نے پیر کے روز ٹویٹر پراطلاع دی ہے کہ داعش کے مالی امور کے سربراہ اور اس جنگجو گروپ کے مقتول رہنما ابوبکرالبغدادی کے نائب سامی جاسم کو، جسے حاجنی حمید کے نام سے بھی پکارا جاتا ہے، گرفتار کر لیا ہے۔

انھوں نے آپریشن کی مزید تفصیلات فراہم کیے بغیر بتایا ہے کہ جب ہمارے عراقی سیکورٹی فورسزکے اہلکار انتخابات کے پر امن انعقاد پر توجہ مرکوز کررہے تھے توعراقی انٹیلی جنس سروسز کے اہلکار سامی جاسم کو دبوچنے کے لیے بیرونی پیچیدہ آپریشن کررہے تھے جس میں انہیں کامیابی ملی اور جاسم پکڑا گیا تاہم انہوں نے اس مقام کی نشاندہی نہیں کی جہاں جاسم کو دبوچا گیا ہے۔

واضح رہے کہ داعش کے سربراہ ابوبکربغدادی 2019 میں شام کے شمال مغربی علاقے میں امریکا کی خصوصی فورسز کی چھا پہ مار کارروائی میں ہلاک ہوگئے تھے۔امریکی محکمہ خارجہ نے اس وقت جاسم سمیت داعش کے رہنماو¿ں کے اتہ پتہ سے متعلق معلومات فراہم کرنے پربھاری انعام کی پیش کش کی تھی۔اور جاسم کو زندہ یا مردہ گرفتار کرانے میں مدد کرنے والے یا اس کے بارے میں اطلاع بہم پہنچانے والے کو 5ملین ڈالر انعام کا اعلان بھی کیا تھا۔