JCO among 5 soldiers killed in J&K

سری نگر:(اے یوایس) جموں وکشمیر کے پونچھ ضلع میں واقع ڈیرا کی گلی علاقے میں سیکورٹی اہلکاروں اور دہشت گردوں کے درمیان تصادم میں ایک جے سی او سمیت پانچ فوجی شہید ہوگئے۔ محکمہ دفاع کے ایک ترجمان نے بتایا کہ دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع ملنے کے بعد سورن کوٹ میں ڈی کے جی کے پاس ایک گاوں میں علی الصباح ایک مہم شروع کی گئی۔

افسران نے بتایا کہ بھاری ہتھیاروں کے ساتھ دہشت گردوں کے کنٹرول لائن پار کرکے چرمیر کے جنگل میں چھپے ہونے کی خبر ملی تھی۔دہشت گردوں کے فرار کے تمام راستے بند کرنے کے لیے موقع پر اضافی فورس کو تعینات کیا گیا ۔موصولہ اطلاع کے مطابق تقریباً 4 دہشت گر سرحد پار کرکے پونچھ پہنچے تھے اور اس کے بعد انہوں نے کشمیر وادی کا رخ کیا تھا ۔ مغل روڈ کے پاس ڈیرا کی گلی علاقے میں سیکورٹی اہلکاروں نے چاروں دہشت گردوں کو گھیر لیا، جس کے بعد دونوں طرف سے گولی باری شروع ہوگئی۔ اس گولی باری میں یہ پانچوں فوجی شدید طور پر زخمی ہوگئے ۔

انہیں فوراً اسپتال لے جایا گیا، لیکن انہوں نے راستے میں ہی دم توڑ دیا۔علاوہ ازیں جموں وکشمیر میں دو الگ الگ مقامات پر ہو رہے تصادم میں سیکورٹی اہلکاروں نے دو دہشت گردوں کو مار گرایا ۔ موصولہ اطلاعات کے مطابق، یہ انکاونٹر اننت ناگ اور باندی پورہ میں ہوئے ہیں۔ اتوار کی دیر رات اننت ناگ کے کھاہ کھنڈ علاقے میں سیکورٹی اہلکاروں کو دہشت گردوں کے موجود ہونے کی اطلاع ملی تھی۔ سرچ آپریشن کے دوران ہوئی فائرنگ میں ایک دہشت گرد مارا گیا ہے۔ اس تصادم میں ایک جموں وکشمیر پولیس کا ایک جوان بھی زخمی ہوا ہے۔ اننت ناگ میں مارے گئے دہشت گردوں کی ابھی شناخت نہیں کی جا سکی ہے۔ دوسرا تصادم باندی پورہ کے حاجن علاقے کی گنڈ جہانگیر میں ہوا ہے۔

جموں وکشمیر پولیس کی طرف سے جانکاری دی گئی ہے کہ علاقے میں دہشت گردوں کے روپوش ہونے کی اطلاع پر چلائی گئی مہم کے دوران انکاونٹر ہوا۔ اس میں بھی ایک دہشت گرد مارا گیا ہے۔ پولیس کے مطابق، مارے گئے دہشت گرد کی شناخت امتیاز احمد ڈار کے طور پر ہوئی ہے۔ وہ دہشت گرد تنظیم لشکر طیبہ کا دہشت گرد تھا۔ حال ہی میں باندی پورہ کے شاہ گنڈ میں عام لوگوں کے قتل کے حادثات میں بھی وہ شامل تھا۔ وہیں جموں وکشمیر پولیس نے اترپردیش کے رامپور کے رہنے والے ایک مشتبہ شخص کو گرفتار کیا ہے۔ اس کے موبائل فون سے کئی پاکستانی نمبر ملے ہیں، جس کی پہچان انس محمد کے طور پر ہوئی ہے۔