Hindu journalists in pakistan receives threatening letters

اسلام آباد: پاکستان میں 20 سے زائد غیر مسلم صحافیوں کو دھمکی آمیز خط موصول ہوئے ہیں۔ اس میں لکھا ہے کہ اگر انہوں نے اسلام یا مسلمانوں کے خلاف اپنی زبان کھولی تو ان کا بھی وہی حال کیا جائے گا جو ہندو صحافی اجے کمارللوانی کاچند ماہ قبل کیا گیا تھا۔

قابل ذکر ہے کہ صحافی اجے کمار کو 17 مارچ کو گولی مار کر ہلاک کر دیا گیا تھا۔ اجے کمار ہندو نابالغ لڑکیوں کے جبری مذہب تبدیلی کرائے جانے اور پاکستان میں ہندوؤں پر زیادتیوں کے معاملات اجاگر کرتا تھا ۔

واضح ہو کہ اجے کو چند نامعلوم بندوق برداروں نے اس وقت گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا جب وہ صوبہ سندھ کے سکھر شہر کے صالح پات علاقہ میں حجام کی دکان میں اپنی حجامت کر رہا تھا۔31سالہ اجے اردو اخبار ڈیلی پوچانو میں ملازمت کرنے کے ساتھ ساتھ رائل نیوز ٹیلی ویژن چینل کا رپورٹر بھی تھا۔