Babul Supriyo formally resigns as BJP Lok Sabha MP

نئی دہلی: بھارتیہ جنتا پارٹی (بی جے پی) چھوڑ کر ترنمول کانگریس(ٹی ایم سی) میں شامل ہونے والے سابق مرکزی وزیر بابل سپریو نے کل رکن پارلیمنٹ کے عہدے سے استعفیٰ دے دیا۔ بابل سپریو نے لوک سبھا اسپیکر اوم برلا سے ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی اورانہیں اپنا استعفیٰ سونپا۔

لوک سبھا اسپیکر کو اپنا استعفیٰ پیش کرنے کے بعد بابل سپریو نے صحافیوں سے کہا، ’میرا دل بھاری ہے، کیونکہ میں نے اپنے سیاسی کیریئر کا آغاز بی جے پی سے کیا تھا۔ میں وزیراعظم نریندر مودی، پارٹی صدر جگت پرکاش نڈا اور وزیر داخلہ امت شاہ کا شکریہ ادا کرتا ہوں کہ انہوں نے مجھ پر اعتماد کیا‘۔سپریو نے کہا کہ اب جب میں بی جے پی کا حصہ نہیں ہوں تو تو مجھے اس سیٹ پر بھی برقرار نہیں رہنا چاہئے۔

بی جے پی کے سون دیب ادھیکاری کے حوالے سے سپریو نے کہا کہ سوون دیب ادھیکاری چند ماہ پہلے تک ٹی ایم سی میں تھے۔ سیاست سے ہٹ کر وہ میرے دوست ہیں اور سیاسی طور پر وہ میرے خلاف جتنا زہر اگل سکتے ہیں اگلیں۔لیکن انہیں اپنے والد اور بھائی کو مشورہ دینا چاہئے کہ چونکہ وہ دونوں اب ٹی ایم سی میں شامل نہیں ہیں اس لیے ممبر پارلیمنٹ کی سیٹ سے مستعفی ہو جائیں۔