Pakistan beat India by 10 wickets, first in World Cup

دبئی: متحدہ عرب امارات کے سب سے بڑے شہر دوبئی میں ہندوستان اور پاکستان کے درمیان ٹی ٹوینٹی ورلڈ کپ 2021 کے سپر 12 مرحلہ کے سپر میچ میں پاکستان نے غیر متوقع طور پر ہندوستان کو میچ کے ہر شعبہ میں مات دیتے ہوئے 10وکٹ سے شکست دے دی۔اگرچہ روہت شرما اور کے ایل راہل پر مشتل جارح افتتاحی جوڑی اور سوریہ کمار یادو، کپتان وراٹ کوہلی اور رشبھ پنت جیسے مڈل آرڈر بلے بازوں کی موجودگی نیز 5اووروں ہر ورلڈ کپ یا ٹی 20کے ہر میچ میں پاکستان کوہرانے کے ریکارڈ سے ایسا محسو س ہو رہا تھا کہ ٹیم انڈیا ٹاس ہارنے کے باوجود خشک فضا میں پاکستان کی خطرناک اور تجربہ کار فاسٹ بولنگ کو پسپا کرتے ہوئے ایک بڑا اور قابل دفاع اسکور کھڑا کرنے میں کامیاب ہوجائے گی ۔

لیکن محض31رنز پر روہت،راہل اور یادو کے آؤٹ ہوجانے سے ٹیم انڈیا ایک بڑا اسکور کھڑا کرنے کی راہ سے بھٹک گئی ۔اگرچہ کپتان وراٹ کوہلی نے ایک اینڈ بچائے رکھتے ہوئے اننگز کو سنبھالنے کی بڑی کوشش کی اور کافی حد تک رشبھ پنت نے بھی ان کا ساتھ دیا لیکن اس دوران گگلی بولر شاداب خان اور آف اسپنر محمد حفیظ نے ان دونوں کو ہی کھل کر ہاتھ دکھانے کا موقع نہیں دیا اور ٹیم انڈیا کو بتدریج قابل رسائی اسکور تک محدود رکھنے کی کوشش کرتے رہے۔جس میں انہیں کافی کامیابی ملی اور ٹیم انڈیا دس اووروں کے اختتام تک محض60رنز ہی بنا سکی۔ابھی اسکور87ہی تھا کہ شاداب نے پنت کا اپنی ہی گیند پر کیچ لپک کر ٹیم انڈیا کو وہ زبردست جھٹکا دیا کہ ایک بڑے اسکور کی رہی سہی امید بھی دم توڑ گئی۔

پنت نے30گیندوں پر 39رنز بنائے جس میں ان کے دو چوکے اور اتنے ہی چھکے شامل ہیں۔ آل راؤنڈر رویندر جڈیجہ بھی کوہلی کا زیادہ دیر تک ساتھ نہ دے سکے اور 13گیندوں پر ایک چوکے کی مدد سے13رنز بنا کر حسن علی کا شکار ہو گئے۔اسی اثنا میں کپتان بابر اننگز کے آغاز میں ہی تباہی مچانے والے بائیں ہاتھ کے فاسٹ بولر شاہین آفریدی کو پھر اٹیک پر لے آئے اور آفریدی نے بھی اپنے کپتان کو مایوس نہیں کیا اور حریف کپتان کوہلی کو سلوور باؤنسر کو کوہلی کے بلے کے باہری کنارے سے ملاقات کراتے ہوئے وکٹ کیپر رضوان کے ہاتھوں میں کیچ کی شکل میں بھیج کر پاکستانی ٹیم کو راحت کا سانس لینے کا موقع دیا۔

کوہلی نے 49گیندوںکی اننگز میں 57رنز بنائے جس کے لیے انہوں نے پانچ چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ ہاردیک پانڈیا نے دو چوکوں کی مدد سے 8بالوں پر11رنز بنا کر اسکور7وکٹ پر 150سے پار کر اکے ہندوستانی ٹیم کو بھی راحت کا سانس لینے کا موقع دیا کیونکہ ہندوستان کا بولنگ اٹیک اس اسکور کو قابل دفاع بنانے کی بھرپور صلاحیت رکھتا تھا۔لیکن پاکستان نے ہدف کا تعاقب کرتے ہوئے 17.5 اوورس میں ہی کوئی وکٹ گنوائے بغیر 152 رن بناکر میچ 10 وکٹوں سے جیت کر پہلی مرتبہ کسی ورلڈ کپ میچ میں ہندوستان کو ہرانے میں کامیابی حاصل کر لی ۔پاکستان کی جانب سے شاہین شاہ آفریدی تین وکٹ لینے کے باعث مین آف دی میچ قرار دیے گئے۔حسن علی نے دو اوعر شاداب و حارث رو¿ف نے ایک وکٹ لی۔پاکستان کی طرف سے افتتاحی بلے بازوں محمد رضوان نے55گیندوںپر چھ چوکوں اور تین چھکوں کی مدد سے 79اور بابر اعظم نے 52بالوں پر چھ چوکوں اور دو چھکوں کے ساتھ68رنزبنائے اور دونوں ہی غیر مفتوح رہے۔