Egyptian woman teacher stabs 12-year-old student

قاہرہ :(اے یو ایس ) مصرمیں رپورٹ ہونے والے ایک عجیب واقعے میں بتایا گیا ہے کہ ایک خاتون ٹیچرنے بچوں کے آپس میں الجھنے پر انتقامی کارروائی کرتے ہوئے 12 سالہ لڑکے پر چاقو سے حملہ کرکے اسے شدید زخمی کردیا۔تفصیلات کے مطابق شمالی مصر میں کفر الشیخ گورنری کے نواحی علاقے القرضا کے ایک اسکول کی معلمہ نے اپنے بچے اور اسکول کے ایک دوسرے بچے کے ساتھ لڑنے پر بارہ سالہ لڑکے پر چاقو سے حملہ کرکے اسے زخمی کردیا۔کفر الشیخ جنرل اسپتال کے ریسپشن اینڈ ایمرجنسی ڈیپارٹمنٹ میں ایک 12 سالہ طالب علم کو لایا گیا ہے۔

اس کی شناخت’قدری آر ایم‘ کے نام سے گئی ہے۔ وہ ’القرضا‘ اسکول میں زیر تعلیم ہے۔ خاتون ٹیچر کے چاقو سے حملے میں اس کے سر اور بازو پر زخم آئے۔ زخمی لڑکے کے رشتہ داروں نے بتایا کہ ایک استانی نے اس پر چاقو سے وار کیا اور خود فرار ہو گئی۔سیکیورٹی سروسز کی تحقیقات سے پتہ چلا کہ استانی القرضا گاو¿ں میں واقع اسکول گئی۔ اس نے کلاس روم میں گھس کر ایک طالب علم پر حملہ کیا اور فرار ہو گئی۔معلوم ہوا کہ متاثرہ طالب علم کا استانی کے بیٹے سے جھگڑا ہوا جس نے اپنے بیٹے سے بدلہ لینے کے لیے اس جرم کا ارتکاب کیا۔کفر الشیخ جنرل اسپتال کے ایک طبی ذریعے نے العربیہ ڈاٹ نیٹ کو تصدیق کی کہ طالب علم کی حالت مستحکم ہے اور اس کی جان خطرسے باہر ہے۔