Pakistan MPA wears garland made of potatoes and tomatoes to Assembly

اسلام آباد: پاکستان میں بڑھتی ہوئی مہنگائی سے ہر طبقہ پریشان ہے۔ ملکی معیشت دیوالیہ ہونے کے دہانے پر ہے۔ عمران حکومت کی پالیسیوں کے خلاف عوام سڑکوں پر نکل آئے۔ اپوزیشن جماعتیں مہنگائی پر قابو پانے میں ناکام وزیراعظم کے خلاف ریلیاں اور مظاہرے کر رہی ہیں۔ اسی سلسلے میں اپوزیشن جماعت مسلم لیگ ن کے ایم ایل اے ایم طارق مسیح نے مہنگائی کے خلاف انوکھا مظاہرہ کیا اور سبزیوں کے ہار پہن کر سائیکل پر سوار ہو کرپنجاب قانون ساز اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کے لیے پہنچے۔

پاکستانی میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے مسیح نے کہا کہ وہ بڑھتی ہوئی مہنگائی کے خلاف دھرنا دیں گے اور سائیکل پر اسمبلی اجلاس میں پہنچیں گے۔ مسیح کی سبزیوں کی مالا آلو، ٹماٹر اور شملہ مرچ وں سے آراستہ تھی۔ جیو نیوز کی ایک رپورٹ کے مطابق بدھ کو پاکستان کی پنجاب اسمبلی کے اندر اور باہر احتجاج دیکھا گیا۔

اپوزیشن ارکان نے پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے اور حکومت مخالف نعرے لگائے۔ یہ مظاہرے ایک ایسے وقت میں ہو رہے ہیں جب پاکستان میں مہنگائی 70 سال کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئی ہے۔ اے این آئی کی رپورٹ کے مطابق کھانے پینے کی اشیا کی قیمتیں تقریبا دوگنی ہو گئی ہیں۔ گھی، تیل، چینی، آٹا اور چکن کی قیمتیں تاریخ کی بلند ترین سطح پر پہنچ گئیں۔مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کے حوالے سے رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ ملک مہنگائی، معاشی تباہی اور بے روزگاری کی قیمت چکا رہا ہے اور حکومت کو یہ احساس نہیں کہ اس نے نہ صرف غریبوں بلکہ وائٹ کالر نوکریوں والے لوگوں کو بھی کچل دیا ہے۔ عالمی بینک سے لے کر آئی ایم ایف تک قرضہ حاصل کرنے میں مایوسی ملنے پر پاکستان کے وزیراعظم عمران خان نے بالآخر سعودی عرب کے ولی عہد محمد بن سلمان کے سامنے جھولی پھیلانے کا کام کیا ہے۔

سعودی فنڈ فار ڈویلپمنٹ نے اعلان کیا ہے کہ وہ پاکستان کے فارن مانیٹری فنڈ کی مدد کے لیے اسٹیٹ بینک آف پاکستان میں 3 ارب ڈالر جمع کرے گا۔ جیو نیوز کے مطابق سعودی عرب نے پاکستان کو یہ بڑا ریلیف ایک ایسے وقت میں دیا ہے جب سعودی فنڈ نے بھی بتایا ہے کہ ایک باضابطہ ہدایت جاری کی گئی ہے جس کے تحت پاکستان کو رواں سال تیل کی مصنوعات کی تجارت کے لیے 1.2 بلین ڈالر دیے جائیں گے۔