Centre launches mega Covid-19 vaccination drive

نئی دہلی:(اے یو ایس )ملک میں کورونا وائرس انفیکشن سے لوگوں کو محفوظ کے لئے بڑی سطح پر چلائی جانے والی ٹیکہ کاری مہم کے تحت اب گھر گھر جاکر کورونا وائرس ٹیکہ لگانا شروع کر دیا گیا ۔ ملک میں اب تک کورونا ویکسین کی 106 کروڑ سے زیادہ ڈوز دی جاچکی ہیں۔ اور اب اس مہم کو مزید رفتار دینے کے مقصد سے مرکزی حکومت نے ریاستوں کے ساتھ مل کر ہرگھر دستک مہم شروع کر دی ہے۔ اس کا آغاز یکم نومبر سے ہو گیا ہے۔ اس کے تحت میڈیکل ٹیمیں گھر گھر جاکر لوگوں کو ویکسین لگائیں گی۔مہم کے تحت ان لوگوں کو کورونا ویکسین لگانے کی ذمہ داری میڈیکل ٹیموں کی ہوگی، جنہوں نے اب تک کورونا ویکسین کی ایک بھی ڈوز نہیں لگوائی ہے یا جو دوسری ڈوز لگوانے نہیں پہنچے ہیں۔

مرکزی وزیر صحت منسکھ مانڈویا گزشتہ دنوں ہی اعلان کر چکے تھے کہ خراب کارکردگی والے اضلاع میں گھر گھر جاکر کوویڈ-19 ٹیکہ کاری کے لئے ’ہرگھردستک‘ مہم شروع کی جائے گی۔ انہوں نے کہا تھا کہ اس کا مقصد لوگوں کو خطرناک وائرس سے بچاو کے لئے مکمل ٹیکہ کاری کے لئے ترغیب دینا ہے۔مختلف ریاستوں اور مرکز کے زیر انتظام ریاستوں کے وزیر صحت کے ساتھ ایک قومی جائزہ میٹنگ کے دوران منسکھ مانڈویا نے کہا تھا کہ کوئی بھی ضلع ایسا نہیں رہنا چاہئے، جہاں مکمل ٹیکہ کاری نہیں ہو۔انہوں نے کہا تھا کہ ہرگھر ’دستک‘ مہم جلد ہی خراب کارکردگی کرنے والے اضلاع میں لوگوں کو مکمل ٹیکہ کاری کے لئے حوصلہ دینے اور ترغیب دینے کے لئے شروع ہوگی۔ آئیے، ہم سبھی اہل لوگوں کو نومبر 2021 کے ا?خر تک کووڈ مخالف ٹیکے کی پہلی خوراک دینے کا ہدف رکھیں۔

ایسے تقریباً 48 اضلاع کی پہچان کی گئی ہے، جہاں اہل مستفضین میں سے 50 فیصد سے بھی کم لوگوں نے پہلی ڈوز لی ہے۔وہیں وزیر اعظم نریندر مودی بھی 3 نومبر کو 11 ریاستوں کے وزرائے اعلیٰ کے ساتھ ٹیکہ کاری مہم کو آگے بڑھانے کو لے کر تبادلہ خیال کریں گے۔ اس دوران ٹیکہ کاری سے متعلق حکمت عملی پر بات کی جائے گی۔ کہا جا رہا ہے کہ وزیر اعظم مودی 40 ایسے اضلاع کے ڈی ایم کے ساتھ بھی میٹنگ کریں گے، جہاں کورونا ٹیکہ کاری کی رفتار بے حد سست ہے۔ ان میں منی پور، جھارکھنڈ، ناگالینڈ، اروناچل پردیش اور مہاراشٹر کے اضلاع خاص طور پر شامل ہیں۔وزیر اعظم نریندر مودی نے ہفتہ کے روز روم میں منعقدہ جی-20 سمٹ میں کہا تھا کہ ہندوستان اگلے سال کے ا?خر تک کووڈ-19 ٹیکے کی پانچ ارب خوراک کا پیداوار کرنے کے لئے تیار ہے۔ انہوں نے یہ تبصرہ کوویڈ-19 کے خلاف لڑائی میں ہندوستان کے تعاون کے کردار کی نشاندہی کرتے ہوئے کی تھی۔