PM Imran Khan releases Rs 20 bilion Rs relief package for poor families

اسلام آباد: غریبی اور سب سے برے دور سے گزر رہے پاکستان میں اپوزیشن کے احتجاج کے درمیان وزیر اعظم عمران خان نے بدھ کے روز غریب خاندانوں کو روزمرہ استعمال کی اشیائے ضروریہ سستے نرخوں پر فراہم کرانے کے لیے 120 ارب روپے کے بڑے پیکیج کا اعلان کیا۔ انہوں نے اسے پاکستان کی تاریخ کی سب سے بڑی فلاحی اسکیم قرار دیا۔ انہوں نے قوم کے نام خطاب میں کہا کہ سبسڈی پروگرام کے تحت آنے والے کنبے آئندہ6 ماہ تک 30 فیصد کم قیمت پر گندم کا آٹا، گھی اور دالیں خرید سکیں گے۔خان نے کہا کہ ان کی حکومت نے 2 کروڑ گھرانوں کو اگلے چھ ماہ کے لیے 30 فیصد سستا آٹا، دالیں اور گھی خریدنے میں مدد کے لیے 120 ارب روپے مختص کیے ہیں۔

سبسڈی کو پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا فلاحی پروگرام قرار دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ یہ پاکستان کو حقیقی معنوں میں فلاحی ملک بنانے کی جانب ایک قدم ہے کیونکہ اس سے ملک بھر کے 13 کروڑ افراد مستفید ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ یہ سبسڈی 1.2 کروڑغریب خاندانوں کو نقد امداد فراہم کرنے کے لیے پہلے سے جاری 260 ارب روپے کے احساس پروگرام کے علاوہ ہے۔خان نے یہ بھی اعلان کیا کہ کامیاب پاکستان پروگرام کے تحت 40 لاکھ غریب خاندانوں کو مکانات کی تعمیر کے لیے بلاسود قرضے دیئے جائیں گے، جبکہ اسی پروگرام کے تحت کسان زراعت کے لیے 5,00,000 روپے تک کے بلاسود ی قرضے حاصل کر سکیں گے۔

انہوں نے کہا کہ اس پروگرام کے تحت ہر منتخب خاندان کے ایک فرد کو مخصوص ہنر کی تربیت دی جائے گی تاکہ وہ روزی روٹی کما سکیں۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومتوں کے تعاون سے پرائم منسٹر ہیلتھ کارڈز کے اجرا پر کام جاری ہے تاکہ ہر خاندان کو 10 لاکھ روپے تک کا مفت علاج فراہم کیا جا سکے اور خیبرپختونخوا کے عوام کو پہلے ہی کارڈ فراہم کیے جا چکے ہیں۔