PML-N leader demands Pak PM’s resignation over irregularities in Daska bypolls

اسلام آباد: پاکستا ن میں اپوزیشن کی سخت گرفت کے درمیان الیکشن کمیشن آف پاکستان کی رپورٹ نے عمران حکومت کی مشکلات میں اضافہ کر دیا ہے۔ رپورٹ سامنے آنے کے بعد پاکستان مسلم لیگ نواز کے صدر شہباز شریف نے وزیر اعظم عمران خان سے کہا ہے کہ وہ مستعفی ہو کر قانون کا سامنا کریں۔ دراصل ای سی پی کی رپورٹ میں واضح طور پر کہا گیا ہے کہ ڈسکا کے ضمنی انتخابات میں بے ضابطگیاں کی گئی تھیں۔رپورٹ میں یہاں تک کہا گیا کہ الیکشن سے متعلق مواد اور وہاں موجود پولنگ عملے کی سکیورٹی کو دھیان میں نہیں رکھا گیا ہے۔ رپورٹ میں اس الیکشن میں پولیس کے کردار پر بھی شکوک و شبہات کا اظہار کیا گیا ہے۔ کہا گیا ہے کہ یہ سارا الیکشن متاثر ہوا ہے۔

پاکستان کے میڈیا میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق کہا گیا ہے کہ اس الیکشن کو صحیح طریقے سے کرانے کے لیے پولیس کو جو ذمہ داری دی گئی تھی وہ صحیح طریقے سے پوری نہیں کی گئی۔ اس میں یا تو پولیس کی مکمل ملی بھگت تھی یا کسی نہ کسی طریقے سے متاثر تھی یا پھر اس پر دباو¿ ڈال کر غلط کام کروایا گیا۔ لیکن اس سے پورا انتخابی عمل متاثر ہوا ہے۔اس پر شہباز شریف نے عمران خان کو ہدف تنقید بناتے ہوئے کہا ہے کہ انہیں ای سی پی کی رپورٹ کے بعد عہدے پر رہنے کا کوئی حق نہیں۔ اس لیے انہیں استعفیٰ دینا چاہیے۔ ای سی پی کی یہ رپورٹ جمعہ کو جاری کی گئی۔ اس رپورٹ میں ای سی پی نے کہا ہے کہ قومی اسمبلی کی نشست نمبر 75 میں الیکشن حکام اور مقامی انتظامیہ نے اپنا کام ٹھیک طریقے سے نہیں کیا اور وہ غیر قانونی طور پر دوسرے لوگوں کے ہاتھوں کی کٹھ پتلی بن گئے۔