Tenure of ED, CBI chiefs extended to up to 5 years

نئی دہلی: (اے یو ایس ) پی ایم مودی کی قیادت والی مرکزی حکومت نے سی بی آئی اور انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ (ای ڈی) کے سربراہ کی مدت ملازمت میں توسیع کا فیصلہ کیا ہے۔ حکومت نے سی بی آئی اور انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے سربراہوں کی میعاد 5 سال تک بڑھانے کے لیے آرڈیننس لایا ہے۔ اس وقت مرکزی ایجنسیوں کے سربراہوں کی مدت دو سال ہے۔ صدرجمہوریہ رام ناتھ کووند نے دونوں آرڈیننس پر دستخط کر دیے ہیں۔آرڈیننس کے مطابق دو سال کی مدت پوری ہونے کے بعد اعلیٰ اداروں کے سربراہان کی مدت ملازمت میں ہر سال تین سال کی توسیع کی جا سکتی ہے۔

جسٹس ایل این راؤ کی سربراہی میں سپریم کورٹ کی بنچ نے حال ہی میں انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے ڈائریکٹر ایس کے مشرا کی مدت ملازمت میں توسیع سے متعلق ایک کیس میں فیصلہ سنایا، جس میں عدالت نے مشاہدہ کیا کہ توسیع صرف غیر معمولی حالات میں ہے۔ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کے سربراہ کا عہدہ 17 نومبر کو ختم ہو جائے گا۔بشرطیکہ انفورسمنٹ ڈائریکٹوریٹ کا ڈائریکٹر اپنی ابتدائی تقرری پر جس مدت کے لیے عہدہ رکھتا ہو مفاد عامہ میں سیکشن (اے ) کے تحت کمیٹی کی سفارش پر اور تحریری طور پر درج کی جانے والی وجوہات کی بنا پر، اس کی مدت ملازمت ایک سال تک بڑھایا جا سکتا ہے۔

تاہم پانچ سال کی مدت پوری ہونے کے بعد انہیں سروس میں کوئی توسیع نہیں دی جا سکتی۔ ان کی دو سالہ مدت 17 نومبر کو ختم ہو رہی ہے۔حکومت کی جانب سے یہ آرڈیننس ایسے وقت میں لائے گئے ہیں جب اپوزیشن جماعتیں مسلسل مرکزی تفتیشی ایجنسیوں کے غلط استعمال کا الزام لگا رہی ہیں۔ اپوزیشن لیڈروں کا کہنا ہے کہ انہیں سی بی آئی، ای ڈی اور دیگر جانچ ایجنسیوں کے ذریعے نشانہ بنایا جا رہا ہے۔ تاہم حکومت کا کہنا ہے کہ ایجنسیوں کے کام میں اس کا کوئی عمل دخل نہیں ہے اور وہ اپنا کام قانون اور قواعد کے مطابق کر رہی ہیں۔عدالت نے کہا کہ این سی بی کی طرف سے پیش کردہ واٹس ایپ چیٹ صرف محدود استعمال کے بارے میں تھی۔ یہ فروخت خریداری یا کسی دوسرے استعمال سے متعلق نہیں تھا۔