One terrorist killed during encounter in J&K's Kulgam

کولگام:(اے یو ایس ) جموں و کشمیر کے کولگام میں سیکورٹی فورسز اور دہشت گردوں کے درمیان مسلح تصادم میں حزب المجاہدین کا ایک کمانڈر مارا گیا۔ بتایا جاتا ہے کہ اس تصادم میں جو کولگام ضلع کے آشمونجی میں ہوا ،مارے گئے دہشت گرد کی شناخت مدثر احمد واگے کے طور پر کی گئی ہے۔ وہ اکیٹیگری کا دہشت گرد بتایا جاتا ہے۔ حال ہی میں کولگام ضلع میں دو انکاؤنٹر میں سکیورٹی فورسز نے پانچ دہشت گردوں کو مار گرایا تھا ۔ آشومجی میں دہشت گردوں کی موجودگی کی خفیہ اطلاع کی تصدیق ہوجانے کے بعد سی آر پی ایف کی ایک پارٹی وہاں پہنچی اور وہاں کے رہائشیوں کو وہاں سے ہٹا کر روپوش دہشت گردوں کو ہتھیار ڈال دینے کہا گیا لیکن انہوں نے جواب میں سلامتی دستوں پر فائرنگ شروع کر دی۔جس نے مسلح تصادم کی شکل اختیار کر لی اور مدثر مارا گیا۔

واضح ہو کہ ٹارگٹ کلنگ کی حالیہ خبروں کے بعد سکیورٹی فورسز علاقے میں سرگرم ہیں اور دہشت گردوں کا قلع قمع کررہے ہیں۔ پونچھ میں فوجیوں کی طرف سے کی گئی کارروائی میں دہشت گردوں کے ایک بڑے نیٹ ورک کو تباہ کر دیا گیا تھا۔جموں و کشمیر کے کولگام ضلع میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ دو الگ الگ انکاؤنٹر میں (ٹی آر ایف) کے کمانڈر آفاق سکندر سمیت پانچ دہشت گرد مارے گئے تھے۔ پولیس نے بتایا تھا کہ یہ انکاو¿نٹر جنوبی کشمیر ضلع کے پومبے اور گوپال پورہ علاقوں میں ہوا تھا۔ ایک پولیس اہلکار نے بتایا کہ جنوبی کشمیر کے کولگام کے گوپال پورہ علاقے میں دہشت گردوں کی موجودگی سے متعلق مخصوص اطلاع پر سیکورٹی فورسز نے محاصرے اور تلاشی کی کارروائی شروع کی۔