Father booked for brutally thrashing son

نئی دہلی:(اے یو ایس ) جب کوئی بچہ غلطی کرتا ہے تو باپ یا خاندان کے سربراہ کا کام اس کو پیار محبت سے اور نہ ماننے کی صورت میں تھوڑی سختی کر کے سمجھا نا ہوتا ہے کیونکہ بار بار جب غلطی ہوتی یا اس سے بڑی کوئی خطا سر زد ہو جا تی ہے تو باپ بھی سخت رویہ اپناتا ہے لیکن اس کی بھی ایک حد ہوتی ہے۔ سزا دینے کا جنون جب حد سے بڑھ جاتا ہے تو ظلم کی شکل اختیار کر لیتا ہے۔ اسی قسم کے ظلم کی ایک وائرل ویڈیو منظر عام پر آئی ہے، جس میں مشتعل شخص ایک چھوٹے بچے کو ڈنڈے سے بری طرح پیٹ رہا ہے۔ ویڈیو کو آئی اے ایس آئی اے ایس افسر اونیش شرن نے شیئر کیا ہے۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے ویڈیو میں نظر آنے والے شخص کے خلاف کارروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

وائرل ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ہے کہ ایک شخص کمرے میں ایک چھوٹے بچے کو دوڑا دوڑا کر بری طرح پیٹ رہا ہے۔ آڈیو صاف نہیں ہے لیکن یہ سنا جا سکتا ہے کہ بچہ ‘پاپا’ سے پٹائی بند کرنے کی التجا کر رہا ہے۔ تاہم، لاکھ کوششوں کے بعد بھی وہ شخص نہیں مانا اور اسے مارتا رہا۔ اس دوران بچہ مارنے سے بچنے کے لیے کمرے میں بھاگ رہا ہے لیکن جس شخص کو وہ باپ کہہ رہا ہے وہ اسے مارتا رہا۔ افسر نے ویڈیو شیئر کرتے ہوئے لکھا، ‘اگر آپ کو اس ویڈیو کی لوکیشن معلوم ہے تو شیئر کریں۔ اس ظالم کو سخت سے سخت سزا ملنی چاہیے۔بتایا جا رہا ہے کہ یہ معاملہ حیدرآباد( دکن) کا ہے۔ یہاں ایک شخص کے خلاف اپنے نابالغ بیٹے کی بری طرح پٹائی کرنے کا مقدمہ درج کیا گیا ہے۔

خبر رساں ایجنسی اے این آئی کے مطابق حیدرآباد پولیس نے اتوار کو بچے کی ماں کی طرف سے درج کرائی گئی شکایت پر کارروائی کی ہے۔ چتریناکا پولیس انسپکٹر عبدالقادر جیلانی کے مطابق ملزم کی شناخت اشوک گھانتے کے طور پر کی گئی ہے جس نے رشتہ دار کے گھر پر کچھ شرارت کرنے پر اپنے بیٹے کو لاٹھی سے مارا۔ایجنسی کے مطابق، پولیس افسر نے کہا، “کہا جا رہا ہے کہ ملزم رشتہ دار کے گھر پر اپنے بیٹے کی مبینہ شیطانی سے ناراض ہو گیا۔ اس نے اپنی بیٹی سے فون پر معاملہ ریکارڈ کرنے کو کہا۔ بچے کی والدہ کو واقعہ کا علم ہوا تو اس نے شکایت درج کرائی۔ پولیس نے بتایا کہ مقدمہ درج کر لیا گیا ہے اور تفتیش جاری ہے۔