Mandatory face masks in force as Omicron cases rise to 22 in UK

لندن: اسکاٹ لینڈ اور انگلینڈ میں میکرون ویرینٹ کے مزید نئے کیسز سامنے آنے کے بعد برطانیہ میں کورونا وائرس کے نئے ویرینٹ سے متعلق کیسز کی تعداد اب22 ہوگئی ہے اور اس سے پیدا ہونے والی تشویش کے پیش نظر ملک میں عوامی مقامات، دکانوں،اور سرکاری ٹرانسپورٹ میں ماسک پہننا لازمی قرار دیا گیا ہے۔تاکہ اومیکرون ویرینٹ کے پھیلاؤ کو بڑھنے کا کوئی موقع نہ مل سکے۔

وزیر اعظم بورس جانسن نے کہا کہ کلاس نے کہا جو کچھ ہم جانتے ہیں اس کی بنیاد پر سے موثر ہونے والے اقدامات درست ہیں اور ان کے ذریعے نئے فارمیٹ سے نمٹنے کے لیے تیاریوں کا وقت ملے گا۔ ہماری ویکسین اور بوسٹرز ہمارے دفاع کی بہترین لائن بنے ہوئے ہیں، اس لیے یہ پہلے سے کہیں زیادہ اہم ہے کہ جب نمبروں کی بات آتی ہے تو لوگوں کو بوسٹر کی خوراک ملے۔ آگے آئیں۔ آج کے اقدامات سے نہ صرف ہمیں نئی قسم کے وائرس کے پھیلاؤ کو کم کرنے میں مدد ملے گی بلکہ وہ ایک دوسرے کی حفاظت میں بھی ہماری مدد کریں گے۔جن مقامات سے نئے کیسز کی اطلاع ملی ہے وہ ایسٹ مڈ لینڈز، دی ایسٹ آف انگلینڈ، لندن اور دی نارتھ ویسٹ ہیں۔ ان سب کو تنہا کر دیا گیا ہے۔

اور یو کے ہیلتھ سیکورٹی ایجنسی (یو کے ایچ ایس اے) کے مطابق یہ جاننے کی کوشش کی جارہی ہے کہ یہ لوگ جومیکرون ویرینٹ سے متاثر پائے گئے ہیں جنوبی افریقہ تو نہیں گئے تھے۔ (یو کے ایچ ایس اے)کی چیف ایکزیکٹیو ڈاکٹر جینی ہیریس نے کہا کہ جیسا کہ ہم دیکھ رہے ہیں کہ اور بھی کئی ممالک میں یہ مرض پھیلا ہوا ہے اس لیے آئندہ دنوں میں مزید کیسز سامنے آنے کا خدشہ ہے۔