An Afghan teenage girl named in 2021's influential women's list

لندن: برطانیہ کے ایک اخبار نے افغان لڑکی سوتودا فوروتان کو اپنی 2021 کی 25 بااثر خواتین کی فہرست میں درج کیا ہے۔ سوتودا فوروتان نے افغانستان میں لڑکیوں کی تعلیم پر پابندی لگانے کے طالبان کے فیصلے کے خلاف آواز اٹھائی۔

ٹولونیوز کی رپورٹ کے مطابق 15 سالہ فوروتان طالبان کے اس فیصلے کے خلاف کھڑی ہوئی تھی جس میں ساتویں سے بارہویں جماعت تک لڑکیوں کے اسکول جانے پر پابندی لگائی گئی تھی۔ یہ پابندی امارت اسلامیہ کے افغانستان پر جبری قبضے کے ساتھ آیا تھا۔

طالبان حکومت نے لڑکوں کو اسکول میں جانے کی اجازت دی ہے، لیکن لڑکیوں کی تعلیم پر پابندی لگا دی تھی۔ یہ فیصلہ اس سال ستمبر میں لیا گیا تھا۔ فوروتان نے 21 اکتوبر کو پیغمبر اسلام کی سالگرہ منانے کے لیے منعقدہ ایک تقریب میں 200 سے زائد لوگوں سے خطاب کرتے ہوئے، کہا کہ آج، لڑکیوں کے نمائندے کے طور پر، میں ایک پیغام دینا چاہتی ہوں۔ ہم سب جانتے ہیں کہ ہرات علم کا شہر ہے پھر لڑکیوں کے اسکول کیوں بند کیے جائیں؟ رپورٹ کے مطابق اس جرات مندانہ مو¿قف کو اپنانے پر فوروٹن کی بڑے پیمانے پر تعریف کی گئی۔