Saudi Crown Prince arrives in UAE on Gulf tour amid economic rivalry

ابو ظبی :(اے یو ایس ) خطہ خلیج کے دورے پر نکلنے والے سعودی ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان( ایم بی ایس ) منگل کے روز متحدہ عرب امارات پہنچ گئے ۔ خلیجی ممالک کے دورے کے دوسرے روز یو اے ای میں جہاں ان کا قیام دو روز رہے گا، انہوں نے یو اے ای کے حکمراں ولیعہد شہزادہ محمد بن زائد سے ملاقات کی ۔ قبل ازیں ایم بی ایس نے اپنے دورہ خلیجی خطہ کا آغاز پیر کی شام ع±مان کے دارالحکومت مسقط سے کیا۔

عمان کے سلطان ہیثم بن طارق نے ہوائی اڈے پر سعودی ولی عہد کا استقبال کیا۔سعودی شاہی دیوان کی جانب سے جاری بیان کے مطابق شہزادہ محمد بن سلمان خلیج تعاون کونسل کے رکن ممالک کا سرکاری دورہ کر رہے ہیں۔ اس دوران میں وہ عمان ، امارات ، قطر ، بحرین اور کویت کی قیادت سے ملاقات میں دو طرفہ خصوصی تعلقات اور مشترکہ دلچسپی کے امور پر بات چیت کریں گے۔ادھر سلطنت ع±مان کے شاہی دیوان نے اپنے بیان میں باور کرایا کہ سلطان ہیثم اور شہزادہ محمد بن سلمان مشترکہ دل چسپی کے متعدد امور پر تبادلہ خیال کریں گے۔ یہ امور دونوں ملکوں کے مفادات اور زیادہ بہتر مستقبل کے حوالے سے دونوں ملکوں کے عوام کی امنگوں سے متعلق ہوں گے۔

رواں سال جولائی میں عمان کے سلطان ہیثم بن طارق اور سعودی فرماں روا شاہ سلمان بن عبدالعزیز کے درمیان سعودی عرب کے شہر نیوم میں ملاقات ہوئی تھی۔ایم بی ایس کے دورہ سے قبل سعودی عرب اور عمان کی کمپنیوں نے مختلف منصوبوں پرمشترکہ کام کے لیے مفاہمت کی تیرہ یادداشتوں پر دست خط کیے ہیں۔ان کے تحت مختلف شعبوں میں دوطرفہ منصوبوں کونجی کمپنیوں کے ذریعے مکمل کیا جائے گا۔ع±مان کے سرکاری ٹیلی ویژن نے خبردی تھی کہ منرلز ڈویلپمنٹ کمپنی نے کان کنی کے شعبے میں تلاش اور ترقی کے مواقع کا جائزہ لینے کے لیے سعودی معدن کمپنی کے ساتھ ایک سمجھوتے پر دست خط کیے ہیں۔عمانی اوکیوگروپ نے سعودی اے سی ڈبلیو اے پاور، ایئر پروڈکٹس، آرامکو ٹریڈنگ اور ایس اے بی آئی سی کے ساتھ مفاہمت کی تین یادداشتوں پردست خط کیے ہیں۔