Saudi Arabia and Qatar to strengthen cooperation

دوحہ:(اے یو ایس ) قطر کے امیر شیخ تمیم بن حمد آل ثانی نے کہا ہے کہ سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز کا دورہ خطے کے حالات کی روشنی میں مضبوط تعلقات کو مزید گہرا کرے گا۔الشیخ تمیم نے مزید کہا کہ سعودی عرب کے ساتھ بھائی چارے اور تعاون پر مبنی تعلقات مشترکہ مستقبل کی ٹھوس بنیادوں پر استوار ہیں۔ انہوں نے شہزادہ محمد بن سلمان کے ساتھ دونوں ممالک کے درمیان تعاون کو بڑھانے کے طریقوں پر تبادلہ خیال کیا۔الشیخ تمیم نے کہا کہ ہم نے شہزادہ محمد بن سلمان کے ساتھ خطے اور خطے میں سلامتی اور استحکام کی حمایت کے لیے اپنی خواہش کا اعادہ کیا۔

شہزادہ محمد بن سلمان اور شیخ تمیم بن حمد آل ثانی نے بدھ کی شام سعودی قطر رابطہ کونسل کے اجلاس کی صدارت کی۔کونسل کے قیام کے لیے ترمیم شدہ پروٹوکول پر گذشتہ اگست میں دستخط کیے گئے تھے جس کی سربراہی شہزادہ محمد بن سلمان اور شیخ تمیم بن حمد کریں گے اور دو طرفہ تعلقات کو آگے بڑھانے کے لیے کام کریں گے۔شہزادہ محمد بن سلمان بدھ کی شام قطر پہنچے تھے جہاں امیر قطر شیخ تمیم نے خود ان کا استقبال کیا تھا۔شہزادہ محمد بن سلمان امارات میں دبئی ایکسپو کے ہیڈ کوارٹر کا دورہ کرنے کے بعد بدھ کی شام متحدہ عرب امارات سے قطر روانہ ہوئے۔ خلیجی دورے کے دوران قطر ان کا تیسرا پڑاو¿ ہے۔سعودی ولی عہد نے بدھ کی شام اس بات کی تصدیق کی کہ سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات تمام شعبوں میں ہم آہنگی اور مشاورت جاری رکھے ہوئے ہیں۔

محمد بن سلمان نے کہا کہ ہم نے متحدہ عرب امارات میں ہونے والی بات چیت سے تعلقات کی مضبوطی کی طرف آگے بڑھنے کا عزم کیا ہے۔اپنے پہلے پڑاؤ میں سلطنت عمان کے دورے کے بعد سعودی ولی عہد نے اپنا خلیجی دورہ ابوظبی میں اپنے دوسرے پڑاؤ میں مکمل کیا جہاں انہوں نے ابوظبی کے ولی عہد شیخ محمد بن زید آل نہیان سے مستقبل کےلیے شراکت داری، دونوں ممالک کے درمیان اسٹریٹجک تعاون کے مختلف پہلوؤں اور دیگر امور پر تبادلہ خیال کیا۔دونوں فریقوں نے مشترکہ خلیجی اور عرب ایکشن کو فعال کرنے کی اہمیت پر زور دیااور متعدد علاقائی اور بین الاقوامی مسائل اور دونوں ممالک کے لیے تشویش کی امور، علاقائی استحکام کے بنیادی ستونوں کو مستحکم کرنے پر کام کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔

سعودی ولی عہد اور ابوظبی کے ولی عہد کی طرف سے منعقد ہونے والے سرکاری مذاکراتی اجلاس میں دونوں ممالک کے درمیان سٹریٹجک تعاون کے مختلف پہلوو¿ں پر تبادلہ خیال کیا گیا۔منگل کو ابوظبی میں ہونے والی بات چیت کے سیشن میں دونوں فریقوں نے مشترکہ خلیج اور عرب ایکشن کو فعال کرنے کی اہمیت، متعدد علاقائی اور بین الاقوامی مسائل اور دونوں ممالک کے لیے دلچسپی کے امور،علاقائی استحکام ، ترقی اور مشترکہ مستقبل کی تعمیر پر بات چیت کی۔