Two LeT terrorists killed in Shopian encounter

شوپیاں: (اے یوایس) جنوبی کشمیر کے شوپیاں ضلع کے کانجویلار ارسا میں بدھ کی رات ہوئے مسلح تصادم میں لشکر طیبہ کے دو جنگجو مارے گئے ہیں۔سرکاری ذرائع نے بتایا کہ پولیس اور سیکورٹی فورسز کے ساتھ ہوئی جھڑپ میں لشکرِ طیبہ سے وابستہ دو جنگجو مارے گئے ہیں۔ دریں اثنا، آئی جی پی کشمیر وجے کمار کے حوالے سے کشمیر پولیس زون نے ٹویٹ کر کے بتایا کہ ہلاک ہونے والے عسکریت پسندوں میں سے ایک کی شناخت شوپیاں کے جان محمد لون کے طور پر کی گئی ہے۔ دیگر جنگجو جرائم کے علاوہ، وہ ضلع کولگام میں بینک منیجر وجے کمار کے حالیہ قتل میں ملوث تھا۔

واضح ہے کہ جموں و کشمیر کے علاقائی دیہاتی بینک کے منیجر وجے کمار ساکن راجستھان کے ہنومان گڑھ کو رواں ماہ کی 2 تاریخ کو کو کلگام ضلع کے آریہ موہن پورہ میں عسکریت پسندوں نے گولی مار کر ہلاک کر دیا تھا۔پولیس نے ایک ٹویٹ میں بتایا، ”دوسرے مارے گئے جنگجو کی شناخت طفیل گنائی کے طور پر کی گئی ہے۔ مجرمانہ مواد، اسلحہ اور گولہ بارود بشمول 01 اے کے 47 رائفل اور ایک پستول،انکاو¿نٹر کے مقام سے برآمد کیا گیا”۔

پولیس کے مطابق یہ تصادم رات کے وقت شروع ہوا جب جنگجووں کی موجودگی کی اطلاع ملنے پر پولیس اور سیکورٹی فورسز نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا۔ جیسے ہی سیکیورٹی فورسز کی مشترکہ ٹیم علاقے میں پہنچی تو وہاں ر وپوش انتہاپسندوں نے ان پر فائرنگ کر دی سلامتی دستوں نے بھی جوابی فائرنگ شروع کر دی جو پل بھر میں تصادم میں بدل گیا ۔