Chinese undeclared blockade adversely affects Nepal’s economy

کٹھمنڈو:چین کے ذریعہ خشکی سے گھرے ملک نیپال کی کی گئی غیر اعلانیہ ناکہ بندی سے ملک کی اقتصادیات بری طرح متاثر ہو رہی ہے کیونکہ نو صنعتکاروں کو زبردست مالی نقصان اٹھانا پڑ رہا ہے۔واضح ہو کہ چین نے کوویڈ 19-کے بہانے نیپال سے متصل اپنی سرحد یکطرفہ طور پر بند کر دی ہے۔

نیپال کے نو صنعتکاروں کی پیہم درخواستوں کے باوجود چین نے ٹاٹو پانی اور کیرنگ چوکیوں سے اشیاءکی درآمد روک کر اپنی غیر اعلانیہ ناکہ بندی نافذ کر رکھی ہے۔تاجروں کے مطابق چین نے ابھی تک مختلف بہانے بنا کر نیپالی ٹرکوں کو پہلے کی طرح تاٹوپانی اور کیرونگ چوکیوں سے جانے کی اجازت نہیں دی ہے۔

نیپال ہمالین کراس بارڈر چیمبر آف کامرس کے صدر اشوک کمار شریستھا کے مطابق، تاتوپانی اور کیرونگ دونوں سرحدوں سے سامان کی بلاتعطل درآمد کا سیزن ختم ہو گیا ہے کیونکہ مون سون کے دوران سرحدی مقامات اکثر سیلاب اور لینڈ سلائیڈنگ کی وجہ سے رکاوٹ بنتے ہیں۔