Islamabad HC issues notice to police after journalist Riaz Khan's arrest  1920/

اسلام آباد: (اے یو ایس )اسلام آباد ہائیکورٹ نے پاکستان سول ایوی ایشن اتھارٹی(سی اے اے) نے اپنے ریٹائرڈ ملازمین کی پینشن میں 30 ہزار روپے کی تخفیف کا نوٹیفکیشن خارج کرد یا جسٹس سردار اعجاز اسحاق خان پر مشتمل ہائی کورٹ کی سنگل بنچ نے پنشن میں تخفیف کے حکم کے خلاف بیرسٹر افغان کریم کنڈی کی عذر داری پر سماعت کرنے کے بعد نوٹیفکیشن پر حکم امتناعی جاری کر دیااور شہری ہوا بازی اتھارٹی سے بھی کہا کہ وہ آئندہ سماعت پر تفصیلی جواب داخل کرے۔

واضح ہو کہ ای جی 7 کے ریٹائرڈ ایڈیشنل ڈائریکٹرز کے عہدوں سے سبکدوش اہلکاروں کی پینشن میں کمی کی گئی تھی۔سی اے اے کے جاری نوٹیفیکیشن کے مطابق پینشن میں کمی کا فیصلہ سی اے اے کے بورڈ آف ڈائریکٹرز نے 25 مارچ کو اپنے 191 ویں اجلاس میں کیا۔مقامی میڈیا میں ذرائع کے حوالے سے شائع ہونے والی اطلاعات کے مطابق سی اے اے بورڈ نے پینشن میں کمی ڈائریکٹر جنرل خاقان مرتضی کی تجویز پر کی ہے، ۔

سی اے اے کے ڈائریکٹر ایچ آر محمد نواز خان نے پینشن میں کمی کا پہلا نوٹیفیکیشن 20 جون کو جاری کیا پھر اسے منسوخ کر کے دوسرا نوٹیفیکیشن 25 جون کو جاری کیا اور اس میں کہا گیا کہ پینشن میں کٹوتی کا اطلاق پرانی تاریخ میں مارچ 2022 سے ہوگا۔نئے نوٹیفیکیشن کے بعد ریٹائرڈ افسران کی پینشن میں 30 ہزار روپے کی کمی ہوگئی تھی، سی اے اے کے ریٹائرڈ افسر اور ایوی ایشن لا کے ماہر عبید عباسی کے مطابق قانون کے تحت ریٹائرڈ ملازمین کی پینشن میں کمی نہیں کی جا سکتی، جبکہ پینشن میں کٹوتی پچھلی تاریخ سے کرنا بھی غیر قانونی ہے۔

سول ایوی ایشن اتھارٹی کے ترجمان نے جیو نیوز کو بتایا کہ ریٹائرڈ ملازمین کی پینشن میں کمی نہیں کی جا رہی، پینشن میں کٹوتی کے دستاویزی ثبوت کے باوجود بھی ترجمان سی اے اے نے پینشن میں کٹوتی نہ ہونے پر اصرار کیا۔ ریٹائرڈ افسران نے پینشن میں کٹوتی کے خلاف عدالت سے رجوع کرنے کا اعلان کیا تھا جس پر اسلام آباد ہائیکورٹ نے اپنا فیصلہ بھی سنا دیا۔