China resumes international flights after two-year- long ban

نئی دہلی:(اے یو ایس)دارالحکومت دہلی سے دبئی جانے والی اسپائس جیٹ ایئر لائن کے طیارے کو تکنیکی خرابی کی وجہ سے گذشتہ روز پاکستان کے کراچی ایئرپورٹ پر اتارنا پڑا۔ طیارے کے تمام138 مسافرمحفوظ ہیں اور انہیں مبئی سے بھیجے گئے ایک دوسرے طیارے سے دوبئی روانہ کر دیا گیا۔ایئرلائن کے ترجمان کے مطابق فلائٹ نمبر ایس جی-11 کے ساتھ پروازکرنے والی بوئنگ بی737 میں دوران پرواز تکنیکی خرابی کے باعث سگنل لا ئٹ چمکنے لگی جس کے بعد طیارے کا رخ کراچی کی طرف موڑ دیا گیا۔ طیارے کو بحفاظت اتارا گیا اور تمام مسافروں کو بحفاظت اتار کر مسافر خانے میں لے جایا گیا۔

کراچی ایئرپورٹ پر مسافروں کو ریفریشمنٹ پیش کی گئی۔بعد میںڈائریکٹوریٹ جنرل آف سول ایوی ایشن نے اطلاع دی کہ عملہ کے ارکان نے دیکھا کہ بائیں طرف کے ایندھن ٹینک میں غیر معمولی طور پر ایندھن ختم ہو رہا ہے۔ انہوں نے ایمرجنسی چیک لسٹ کے مطابق چیک کیا لیکن ایندھن کی سطح نیچے آتی رہی۔ اس پر پائلٹ نے کراچی میں ایئر ٹریفک کنٹرولر سے رابطہ کیا اور طیارے کا رخ کراچی کی طرف موڑ دیا گیا۔ ہوائی جہاز کے اترنے کے بعد جانچ پڑتال میں بائیں بازو کے مین ٹینک سے ایندھن کے رسنے کے کوئی ابتدائی آثار نہیں ملے۔کراچی ایئرپورٹ کے ترجمان کے مطابق انجینئرز نے طیارے کی جانچ کر کے خامیاں دور کرنے کی کوشش کی لیکن کوئی کامیابی نہ ملنے کے باعث ممبئی سے ایک دوسرا طیارہ بھیجا گیا جو 138مسافروں کو لے کر دوبئی روانہ ہو گیا۔