China's Wuhan shuts some businesses, transport amid new COVID cases

بیجنگ : چین کے شہر ووہان میں کورونا وائرس نے ایک بار پھر دستک دی ہے۔ اس شہر کے ایک ضلع جیانگشیا میں کورونا کے چار نئے مریض سامنے آئے ہیں جس کے بعد انتظامیہ نے احتیاطی تدابیر کے طور پر 10 لاکھ افراد کو گھروں میں قید کردیا ہے۔ووہان وہی شہر ہے جہاں 2019 کے آخری مہینوں میں کورونا وائرس کے پہلے کیس سامنے آئے تھے۔ اس شہر سے پوری دنیا میں کورونا وائرس کا انفیکشن پھیل گیا اور اس کے بعد سے اب تک لاکھوں افراد لقمہ اجل بن چکے ہیں۔ ووہان کے جیانگشیا ضلع میں حکام نے بتایا کہ انہوں نے کورونا کے 4 کیسز سامنے آنے کے بعد 970,000 سے زائد آبادی والے مرکزی شہری علاقے میں اگلے 3 دن کے لیے لاک ڈان نافذ کر دیا ہے۔

ایک حکومتی بیان کے مطابق، تفریحی مقامات جیسے بار، سینما گھر، اور انٹرنیٹ کیفے بشمول چھوٹے کلینک اور جیانگ شیا ضلع میں بازار بند کر دیے گئے ہیں۔ مظاہروں سے لے کر کنونشن تک، ریستوراں میں کھانے اور بڑے اجتماعات پر فوری طور پر پابندی لگا دی گئی ہے۔ تمام عبادت گاہیں بند اور مذہبی سرگرمیوں پر پابندی لگا دی گئی۔ تعلیمی ادارے اور سیاحوں کو راغب کرنے والی تقریبات کو بھی روک دیا گیا ہے۔حکام نے 4 زیادہ خطرے والے علاقوں کی بھی نشاندہی کی ہے جہاں کے رہائشیوں کو گھر سے نکلنے پر پابندی ہے۔ اس کے علاوہ 4 مقامات کی نشاندہی درمیانے خطرے والے علاقوں کے طور پر کی گئی ہے۔ یہاں کے رہائشیوں کو ان کی سوسائٹی یا گھروں کے احاطے سے باہر آنے سے روک دیا گیا ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ان پابندیوں کا مقصد لوگوں کی نقل و حرکت کو مزید کم کر کے انفیکشن کے خطرے کو کم کرنا اور کم سے کم وقت میں زیرو کوویڈ کا ہدف حاصل کرنا ہے ۔