LeT militant killed in encounter in Baramulla

سری نگر:(اے یو ایس) جموں وکشمیر کے شمالی ضلع بارہمولہ کے بنر گاوں میں رات بھر جاری رہنے والی جھڑپ میں لشکر طیبہ کا ایک مقامی جنگجو مارا گیا۔ پولیس کے ایک ترجمان نے بتایا کہ شمالی ضلع بارہمولہ کے بنر علاقے میں جنگجو ؤں کے چھپے ہونے کی خفیہ اطلاع موصول ہونے کے بعد پولیس اور سیکورٹی فورسز نے ہفتے کی شام اس علاقے کو اپنے محاصرے میں لے کر انہیں ڈھونڈ نکالنے کے لئے تلاشی کارروائی کا آغاز کیا۔

انہوں نے بتایا کہ خود کو سلامتی عملے کے گھیرے میں پا کر ملی ٹنٹوں نے سیکورٹی فورسز پر اندھا دھند گولیاں برسا کر فرار ہونے کی بھر پور کوشش کی تاہم حفاظتی عملے کی کارگر حکمت عملی نے انہیں فرار ہونے کا کوئی موقع فراہم نہیں کیا اور دونوں میں فائرنگ کا تبادلہ شروع ہو گیا جو رات بھر چلتا رہا ۔ ان کے مطابق رات بھر جاری رہنے والی جھڑپ کے بعد سلامتی دستوں کو تصادم کے مقام پر ایک جنگجو کی لاش ملی جس کی بعد میں شناخت ارشاد حمد بٹ ساکن پٹن کے طورپر کی گئی ۔

ترجمان نے بتایا کہ مہلوک ملی ٹینٹ لشکر طیبہ سے وابستہ تھا اور وہ مئی 2022 سے علاقے میں سر گرم تھا۔ تصادم کی جگہ ایک اے کے رائفل، دو میگزین اور 30 گولیوں کے راونڈ برآمد کرکے ضبط کئے گئے۔ انہوں نے مزید کہاکہ ہلاک ہونے والا جنگجو سلامتی دستوں پر حملوں کی منصوبہ بندی کرنے اور انہیں پایہ تکمیل تک پہنچانے میں پیش پیش تھا ۔ اس کے خلاف کئی مقدمات بھی درج ہیں۔دریں اثنا پولیس نے عوام الناس سے اپیل کی ہے کہ وہ جائے تصادم پر جانے سے تب تک گریز کیا کریں جب تک اسے پوری طرح سے صاف قرار نہ دیا جائے کیونکہ پولسی اور دیگرسلامتی ادارے لوگوں کے جان ومال کی محافظ ہے لہذا لوگوں کی قیمتی جانوں کو بچانے کے لئے پولیس ہر ممکن کوشش کرتی ہے۔