Iran says 'ready to cooperate' with U.N. nuclear watchdog

تہران: اقوام متحدہ کے جوہری نگراں ادارے کی اس رپورٹ کے بعد کہ وہ اس امر کی یقین دہانی نہیں کراسکتا کہ ایران کا جوہری پروگرام پرامن مقاصد کے لیے ہے ایران نے اپنے اس موقف کا اعادہ کیا کہ وہ اس عالمی ادارے کے ساتھ تعاون کرنے کو تیار ہے۔وزارت خارجہ کے ترجمان ناصر کنعانی نے کہا کہ ایران اپنے پر امن نوعیت کی جوہری سرگرمیوں کے حوالے سے جھوٹ اورفضول سوچ و فکر کو صاف کرنے کے لیے عالمی ادارے سے تعاون کرنے پر تیار ہے۔

بین الاقوامی جوہری توانائی ایجنسی (آئی اے ای اے) نے بدھ کے روز جو رپورٹ جاری کی تھی اس میں اس نے کہا تھا کہ وہ قطعیت کے ساتھ اس امر کی یقین دہانی نہیں کرا سکتی کہ ایران کے جوہری پروگرام کی نوعیت قطعاً پر امن ہے۔آئی اے ای اے کی اس رپورٹ نے ایران اور بڑی طاقتوں بشمول امریکہ کے درمیان 2015کے جوہری معاہدے کی بحالی کے لیے سفارتی مساعی کو مزید الجھا دیا۔ کیونکہ اس رپورٹ کے منظر عام پر آتے ہی فرانس، جرمنی اور برطانیہ نے واضح طور پر کہہ دیا کہ ایران کے خلاف پابندیاں اٹھالینے کے عوض ایران کے جوہری پروگرام کو روکنے کا معاہدہ بحال کرنے کے حوالے سے ایران کے ارادے مشکوک ہیں۔