Why is no action taken against Imran Khan? Fazlur Rehman

اسلام آباد:(اے یو ایس ) پاکستان ڈیمو کریٹک موومنٹ اور جمعیت علمائے اسلام(ف) کے سربراہ مولانا فخل الرحمٰن نے کہا ہے کہ عمران خان انٹرنیشنل اور امپورٹیڈ چور ہیں لہٰذا ان کا محاسبہ ہونا چاہیے لیکن میں خود اپنی حکومت سے شاکی ہوں کہ ابھی تک ان کے خلاف کارروائی کیوں نہیں ہو سکی۔ آخر وہ ایسے مجرم کو اتنی ڈھیل کیوں دے رہے ہیں۔پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ کے سربراہ نے لاڑکانہ میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان نے فوجی سربراہ کو متنازعہ بنانے کی کوشش کی اور اگر بالفرض کوئی ملاقات ہوئی بھی ہے تو اس کا معنی یہ ہے کہ وہ بے نتیجہ ثابت ہوئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ چیئرمین پی ٹی آئی فوج، الیکشن کمیشن، پارلیمنٹ اور عدلیہ سمیت ہر ادارے پر حملہ کررہے ہیں، کس ادارے کو انہوں نے معاف کیا ہے، اگر ادارہ ان کے حق میں چلتا ہے اور ان کے حق میں فیصلے دیتا ہے تو پھر وہ بڑا انصاف والا ادارہ ہے، اگر ادارہ ان کے خلاف فیصلہ دیتا ہے تو وہ غدار بھی ہو جاتے ہیں اور نجانے وہ کن کن القابات سے نوازتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ میں ایک بات واضح کردینا چاہتا ہوں کہ عمران خان ختم ہوچکا ہے، اس کی سیاست تمام ہوئی، نہ ہم ان سے مرعوب ہیں، نہ ان کو ہم یہ حق دینا چاہتے ہیں کہ وہ فوجی سربراہ کے تقرر میں کسی قسم کی مداخلت کرے ۔آئین کے تحت یہ جس کی ذمے داری ہے وہی ادا کرے گا، میرٹ کی بنیاد پر اداکرے گا۔

مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ عمران خان حکومت سے پوچھنے والے ہوتے کون ہیں کہ فوجی سربراہ کا تقرر کس نے کرنا ہے، کیا یہاں کوئی نظام نہیں ہے، کیا یہ کوئی ملک اور ریاست نہیں ہے، ہم انہیں واضح طور پر بتا دینا چاہتے ہیں کہ تم لاکھ چیخو، لاکھ چلاو¿ اور تڑپو، جو ہو گا آئین کے مطابق ہو گا، وزیراعظم کا اختیار ہے تو وہی فیصلہ کرے گا، پارلیمنٹ، عدالت، الیکشن کمیشن کا اختیار ہے تو وہ فیصلے کرتے جائیں گے اور آپ کی چیخ و پکار ان پر اثر انداز نہیں ہو سکے گی۔پنجاب میں مریم اورنگزیب اور جاوید لطیف کے خلاف درج مقدمات کے حوالے سے سوال پر انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت خود کمزور ہے اور شاید وہ پلٹ جائے گی۔