Administration organises saffron cultivation training in Pampore

سری نگر: حکومت کشمیری زعفران کی، جو پوری دنیا میں مشہور ہے اور جس کی قومی اور بین الاقوامی مارکیٹ میں بہت مانگ ہے ،، کاشت کو فروغ دینے کے لیے کوششیں کر رہی ہے۔ اس کے تحت پامپور میں، جسے کشمیر کا زعفرانی قصبہ بھی کہا جاتا ہے، ایک بیداری اور تربیتی کیمپ کا انعقاد کیا گیا۔کیمپ کا اہتمام ایڈوانس ریسرچ سٹیشن برائے زعفران اور بیج مصالحہ، محکمہ دیہی ترقی، نیشنل بینک آف ایگریکلچر، شیر کشمیر یونیورسٹی آف ایگریکلچرل اینڈ سائنسز نے کیا تھا۔

سکسات کے پروفیسر دل محمد مخدومی نے کہا کہ کشمیری زعفران بہت مشہور ہے اور حکومت چاہتی ہے کہ اس کی پیداوار کو مارکیٹ کے مطابق مزید فروغ دیا جائے۔اس موقع پر کسانوں کو مفت زعفران کے بلب بھی دئیے گئے۔ ارشاد احمد نامی کسان نے بتایا کہ حکومت کی اس طرح کی یہ پہلی کوشش ہے۔ ہمیں خوشی ہے کہ حکومت زعفران کو لے کر احمداقدامات کر رہی ہے۔اس کیمپ کا بنیادی مقصد کسانوں کو زعفران کی کاشت کی نئی تکنیکوں سے آگاہ کرنا تھا تاکہ وہ مستقبل میں اچھی فصل حاصل کر سکیں۔

اس پروگرام میں بہت سے ترقی یافتہ کسانوں نے حصہ لیا۔ انہیں انڈور فارمنگ کے بارے میں بھی بتایا گیا۔پامپور سیاحوں کی توجہ کا مرکز بھی ہے۔ کشمیر کی بہترین زعفران کی فصل پامپور میں پائی جاتی ہے۔ جب زعفران کے پھول کھلتے ہیںاور اپنے چرم پر ہوتے ہیں تو پامپور کی خوبصورتی چمک کر سامنے آتی ہے۔