IAF set to retire Abhinandan Varthaman’s MiG-21 squadron by Sept end

نئی دہلی: ہندوستانی فضائیہ اپنے مگ-21 سکواڈرن سوارڈ آرمز کو ریٹائر کرنے کی تیاری کر رہی ہے۔ فروری 2019 میں بالاکوٹ فضائی حملے کے ایک دن بعد، ونگ کمانڈر ابھینندن وردیمان نے پاکستان کے ایک ایف-16 طیارے کو مار گرایا تھا، اس وقت وہ مگ21 ہی اڑارہے تھے۔ ایک رپورٹ کے مطابق سوارڈ آرمزمگ -21 کے باقی بچے چار سکواڈرن میں سے ایک ہے۔دفاعی ذرائع کے مطابق سری نگر میں تعینات یہ ا سکواڈرن ستمبر کے اواخر تک ریٹائر کر دیا جائے گا۔

مگ21 کے باقی تین سکواڈرن 2025 تک فضائیہ سے ہٹا دیے جائیں گے۔ واضح ہو کہ مگ 21 جیٹ طیارے کو تقریباً چار دہائیاں قبل ہندوستانی فضائیہ کے بیڑے میں شامل کیا گیا تھا، ان میں سے کئی طیارے گر کر تباہ بھی ہو چکے ہیں۔ سری نگر میں مقیم 51 سکواڈرن کو سوارڈ آرمز کے نام سے بھی جانا جاتا ہے۔ اس بحری بیڑے نے 1999 میں کارگل جنگ میں بھی حصہ لیا تھا۔پلوامہ دہشت گردانہ حملے کے دو ہفتے بعد، ہندوستانی فضائیہ کے لڑاکا طیاروں نے 26 فروری 2019 کو بالاکوٹ میں جیش محمد کے دہشت گردی کے تربیتی کیمپوں پر فضائی حملہ کیا تھا۔

جوابی کارروائی میں، پاکستانی لڑاکا طیاروں نے 27 فروری کو ہندوستانی سرحد میں داخل ہونے کی کوشش کی تھی لیکن ہندوستانی فضائیہ نے ان کا تعاقب کر کے واپس دوڑا دیا تھا۔اس وقت ونگ کمانڈر ابھینندن مگ 21 اڑارہے تھے۔ اس نے اسی طیارے سے پاکستان کے F-16 کو مار گرایا، تاہم ابھینندن کا طیارہ بعد میں پاکستان کی سرحد پر گر کر تباہ ہو گیا، جس کے بعد اسے پاکستانی فوج نے قید کر لیا تھا۔ ہندوستان کے دباؤ میں پاکستان نے تقریباََِِ 60 گھنٹے بعد ابھینندن وردیمان کو چھوڑا تھا۔ابھینندن کواس بے مثال ہمت کے لیے 2019 میں یوم آزادی کے موقع پر ویر چکر سے نوازا گیا تھا۔