France's Macron urges world to put 'maximum pressure' on Putin

پیرس:(اے یوایس )فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون نے عالمی برادری سے روسی صدر ولادیمیر پوتین پر زیادہ سے زیادہ دباؤ ڈالنے کا مطالبہ کیا۔نیویارک میں ایمانوئل میکرون نے اقوام متحدہ میں جوہری تحفظ سے متعلق اجلاس میں شرکت سے قبل ایک بیان دیا۔انہوں نے پوتین کے جزوی طور پر متحرک ہونے کے اعلان کے بارے میں ایک صحافی کے سوال کے جواب میں کہا کہ یقیناً، مجھے افسوس ہے کہ روسی صدر نے جزوی طور پر متحرک ہونے کا انتخاب کیا اور اپنے ملک کے نوجوانوں کو جنگ میں گھسیٹ لیا۔”اس بات کی طرف اشارہ
کرتے ہوئے کہ ہندوستان کے بعد چین نے بھی 24 فروری سے جاری یوکرین-روس جنگ کے حوالے سے جنگ بندی کا مطالبہ کیا ہے، میکرون نے کہاکہ روس تیزی سے تنہا ہوتا جا رہا ہے، اب روس کے حربوں کو کوئی بھی نہیں سمجھ پا رہا ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ پوتین نے جنگ کی سطح میں اضافے کا فیصلہ کیا ہے، جو کہ روس، روسی شہریوں اور نوجوانوں کے لیے ایک بری خبر ہے۔ کے جزوی طور پر متحرک ہونے کے اعلان کے بارے میں ایک صحافی کے سوال کے جواب میں کہا کہ”یقیناً، مجھے افسوس ہے کہ روسی صدر پوتین نے جزوی طور پر متحرک ہونے کا انتخاب کیا اور اپنے ملک کے نوجوانوں کو جنگ میں گھسیٹ لیا۔

اس بات کی طرف اشارہ کرتے ہوئے کہ ہندوستان کے بعد چین نے بھی 24 فروری سے جاری یوکرین-روس جنگ کے حوالے سے جنگ بندی کا مطالبہ کیا ہے، میکرون نے کہاکہ روس تیزی سے تنہا ہوتا جا رہا ہے، اب روس کے حربوں کو کوئی بھی نہیں سمجھ پا رہا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ پوتن نے جنگ کی سطح میں اضافے کا فیصلہ کیا ہے، جو کہ روس، روسی شہریوں اور نوجوانوں کے لیے ایک بری خبر ہے۔