RSS chief Mohan Bhagwat visits Madrasa in Delhi

نئی دہلی:(اے یوایس) آر ایس ایس سربراہ موہن بھاگوت نے جمعرات کی صبح دہلی کے آزاد مارکیٹ میں واقع تجوید القرآن مدرسہ کا دورہ کیا اور وہاں قرآن و حدیث کی تعلیم حاصل کرنے والے بچوں سے ملاقات کی اور ان سے قرآن پاک کی تعلیمات کے حوالے سے معلومات حاصل کیں انہوں نے مدرسہ کے طلباسے یہ بھی معلوم کیا کہ وہ تعلیم مکمل کرنے کے بعد کیا بنیں گے ۔ موہن بھاگوت پہلی مرتبہ کسی اسلامی مدرسہ میں اچانک پہنچے تھے۔ بتایا جارہا ہے کہ تجوید القرآن مدرسہ دہلی کے آزاد مارکیٹ میں واقع ہے، جس میں 300 بچے پڑھتے ہیں۔

قبل ازیں بھاگوت نے کے جی مارگ پر واقع مسجد کا دورہ کیا اور آل انڈیا مسلم امام آرگنائزیشن کے سربراہ امام عمیر الیاسی سے ملاقات کی۔ اس ملاقات کے دوران بھاگوت کے ساتھ گوپال کرشن اور آر ایس ایس لیڈر اندریش کمار بھی موجود تھے۔ تقریبا 40 منٹ تک ملاقات ہوئی ۔ موہن بھاگوت نے مسجد میں میٹنگ کے بعد کے جی مارگ میں واقع مسجد کے امام عمیر الیاسی کے والد جمیل الیاسی کے مزار کی زیارت بھی کی ۔ زیارت کے بعد موہن بھاگوت نے امام کے اہل خانہ سے بھی ملاقات کی۔ اس کے بعد عمیر الیاسی موہن بھاگوت کو مدرسہ تجوید القرآن لے کر گئے۔اس پوری ملاقات اور مدرسہ میں گزارے وقت کے حوالے سے عمر الیاسی نے کہا کہ مجھے اس بات کی خوشی ہے کہ موہن بھاگوت کا یہاں آنا یہ پیغام دیتا ہے کہ ہم سب ایک ہیں اور ہمیں مل کر رہنا چاہئے۔

ان کے یہاں آنے سے ایک اچھا پیغام جائے گا۔ یہ محبت کا پیغام ہے، موہن بھاگوت نے ہندو مسلمان کے ڈی این اے کو لے کر جو کہا وہ صحیح کہا ہے۔ انہوں نے سب کو ایک کرنے کی بات کہی ہے۔ ان کی ذمہ داری بھی ہے کہ سب کو ساتھ لے کر چلیں، ملک کا اتحاد برقرار رہے اور سب مل جل کر رہیں۔ بھاگوت کا مدرسہ آنا بچوں کو اور مدرسہ کے عملہ بشمول اساتذ اور مقامی ہ لوگوں کو بہت اچھا لگا۔ مدرسہ میں موہن بھاگوت کے جانے سے ملک میں ایک اچھا پیغام جائے گا۔ موہن بھاگوت نے بچوں سے کہا کہ سب لوگ مل جل کر رہیں اور ہمارا ملک ترقی کررہا ہے، اوپر جارہا ہے، ہم سب اپنے ملک کی ترقی میں حصہ بنیں۔ ہماری ان کی کوشش ہے کہ ملک کو آگے لے کر جائیں۔ ہمارا اور ہر ہندوستانی کا مقصد ہے۔