US lawmaker Krishnamoorthi says Pakistani ISI sees him as an enemy spy

واشنگٹن: ہندوستانی نڑاد امریکی قانون ساز راجہ کرشنامورتی نے کہا ہے کہ پاکستان کی خفیہ ایجنسی آئی ایس آئی جنوبی ایشیائی ملک میں موجود انتہا پسندوں کے خلاف ان کے موقف کی وجہ سے انہیں دشمن جاسوس سمجھتی ہے۔ ایلی نوائے سے ڈیموکریٹک پارٹی کے رکن پارلیمنٹ کرشنامورتی نے بوسٹن میں یو ایس انڈیا سیکورٹی کونسل(یو ایس آئی ایس سی)کے صدر اور ممتاز ہندوستانی نڑاد امریکی شہری آر وی کپور کی رہائش گاہ پر فنڈ جمع کرنے والے کمیونٹی کے ارکان سے خطاب کرتے ہوئے یہ ریمارکس دیئے۔

یو ایس آئی ایس سی کی طرف سے جاری کردہ ایک پریس ریلیز کے مطابق، انہوں نے (کرشنا مورتی) کہا کہ آئی ایس آئی انہیں پاکستان میں موجود انتہا پسندوں کے خلاف ان کے موقف کی وجہ سے دشمن جاسوس کے طور پر دیکھتی ہے۔ انہوں نے زور دے کر کہا کہ وہ تمام مذاہب کا بھی احترام کرتے ہیں اور کبھی بھی کسی رنگ، نسل یا مذہب کے ساتھ امتیاز نہیں کرتے۔ ریلیز کے مطابق کرشنامورتی نے ہندوستانی نڑاد امریکی کمیونٹی کو یقین دلایا کہ اگر وہ الیکشن جیتتے ہیں تو وہ ہندوستان اور امریکہ کے درمیان اسٹریٹجک تعاون کی حمایت جاری رکھیں گے، تاکہ یہ دوستی بحرالکاہل کے علاقے میں چین کے عزائم پر انکش لگا سکے۔

اس تقریب میں ہندوستانی نڑاد امریکی کمیونٹی کی کئی مشہور شخصیات نے شرکت کی جن میں وکرم راجیاداکش، دنیش پٹیل ابھیشیک سنگھ، امر ساہنی، دیپیکا ساہنی اور ڈاکٹر راج رینا شامل ہیں۔یو ایس آئی ایس سی نے کہا کہ عطیہ پروگرام کا انعقاد نومبر میں ہونے والے وسط مدتی انتخابات سے قبل کرشنامورتی کے لیے فنڈز اکٹھا کرنے کے لیے کیا گیا تھا۔ تنظیم نے کہا کہ اس تقریب کا مقصد یہ بھی تھا کہ کرشنامورتی کو ہندوستانی نڑاد امریکی کمیونٹی کے لیے دلچسپی کے مسائل اٹھانے کے لیے ان کی مسلسل کوششوں کے لیے کمیونٹی کی حمایت ظاہر کی جائے۔